اجڑ سکےگی کسی سےنہ خانقاہ مری تحریر محمدعارف

اجڑ سکےگی کسی سےنہ خانقاہ مری
تحریر : محمدعارف ٹیکسلا
راولپنڈی سےپشاور کی طرف آئیں تو پتھروں کےشہر ٹیکسلا سےچند قدم آگےایک چھوٹی سی مضافاتی بستی نواب آباد ہےجو صنعتی شہر واہ کینٹ کا ایک جزو لاینفک ہوتےہوئےبھی دیہات کی دلفریب فضا کا دلنشین رنگ لئےہوئےہے۔اس بستی کی آبادی بھی کافی بڑھ گئی ہی۔ دوردور تک پھیلےہوئےلہلہاتےکھیتوں کےحسین نظارےاپنی طرف متوجہ کرتےہیں۔ رات کو گہرےدبیز اندھیرےکی چادر فضا پر تن جاتی ہےجس سےپراسراریت کا احساس ہوتا ہی۔ اسی مضافات کی وجہ شہرت ایک اہم علمی و روحانی شخصیت علامہ محمد یوسف جبریل ہیں۔ علامہ محمد یوسف جبریلمذاہب عالم، فلسفہ، علم کلام، سائنس، شاعری، معاشیات، اقبالیات، اور قرآنیات کےزبردست عالم تھی۔ انہوں نےمختلف النوع علوم پر شہرہ آفاق کتب تحریر کی ہیں ،جن کی تعداد تقریباََ چالیس کےقریب بنتی ہی۔ ان کا بڑا موضوع سورة الھمزہ کی تشریح و توضیح ہی۔ وہ جدید سائنسی عہد کو ایٹمی تباہی سےبچا نا چاہتےہیں۔ وہ اسلحےاور میزائلیوں کی دوڑ کو ختم کرکےپر امن بقائےباہمی کا نعرہ مستانہ بلند کرنےکےخواہاں رہی۔ علامہ محمد یوسف جبریل ایک محب وطن پاکستانی بھی تھی۔ وہ عمر بھر پاکستان کی نظریاتی و جغرافیائی سرحدوں کی حفاظت پر کمربستہ رہی۔ ان کےمضامین اور تحریروں سےایک سچااور کھرا پاکستانی نظر آتاہی۔ وہ دوقومی نظریئےکےزبردست حامی تھے۔ ان کی ملی شاعری فکر اقبال کاتسلسل ہی۔ ان کےشعری مجموعے”نغمہءجبریل آشوب“، خواب جبریل، سوز جبریل ،نالہ جبریل“ کےعنوان سےچھپ چکےہیں۔ جب کہ فارسی مجموعہ کلام ”راز خلیل“ زیرِ اشاعت ہے۔قرآن حکیم کی الہامی حیثیت پر مس اینی مری شمل جرمن مستشرق سکالر سےانکا مکالمہ خاصےکی چیز ہی۔ اسلام کےمعاشی نظام جدید و قدیم اٹامزم فلسفہ تخلیق کائنات جیسےموضوعات پر ان کا علمی کام اہمیت کا حامل ہی۔علامہ محمد یوسف جبریل ملک آباد کی تنگ و تاریک اور پرپیچ گلیوں میں واقعی ایک چھوٹےسےگھر میں بیٹھ کر اس قدر متنوع الجہات علمی کارنامہ انجام دےگئےہیں جسےرہتی دنیاتک یاد رکھا جائےگا۔ علامہ محمد یوسف جبریل خود تو اسی بستی میں آسودہ خاک ہو گئےہیں مگر ان کی تحریریں قریہ قریہ ان کی موجودگی کا احساس دلاتی ہیں، مترجم، محقق اور دانش ور ڈاکٹر تصدق حسین نی” علامہ محمد یوسف جبریل، حیات و خدمات“ کےعنوان سےایک کتاب تحریر کی ہےجو ان کی شخصیت اور علم کےمختلف گوشوں کو سامنےلاتی ہی۔ ڈاکٹر تصدق حسین،ذاکر نائیک، ہارون یحیٰ کی کتب کےتراجم کی وجہ سےمشہور ہیں۔ علامہ محمدیوسف جبریل تحریک تحفظ و استحکام پاکستان کےذریعےاسلامی جمہوریہءپاکستان کےداخلی استحکام اور نطریاتی تشخص کےلئےسرگرم عمل رہی۔ انہوں نے1970 ءکےالیکشن سےقبل ”چڑیا گھر کا الیکشن “کےنام سےایک خوبصورت مزاحیہ کتاب لکھی۔ یہ کتاب قسطوں میںندائےملت کےاخبار میں شائع ہوئی ۔اس کتاب کو علامہ صاحب کےبیٹےشوکت محمود اعوان نےاب کتابی شکل میں شائع کیا ہی۔ واضح ہو کہ شوکت اعوان ادارہ افکار جبریل اور ادارہ تحقیق الاعوان پاکستان کےمرکزی جنرل سیکرٹری ہیں۔ اور اپنےوالد گرامی کےعلمی مشن کو بھی آگےبڑھا رہےہیں۔ علامہ محمدیوسف جبریل کی طویل نظمیں ”گلبانگ صدارت اور نقارہ“ اس سلسلےکی کڑی ہیں۔ بابا جی عنایت اللہ صاحب ایک ایسےمرد درویش ہیں جو اس وقت مکتبہ واصفیہ کےواحد ترجمان ہیںجنہوں نےآئینہ وقت، صدائےوقت، نادوقت، ندائےوقت، انقلاب وقت، چراغ وقت، اور اب بلائےوقت وغیرہ شائع کرکےعلامہ محمد یوسف جبریل کی اس علمی وفکری تحریک کو پروان چڑھایا ہی۔ پاکستانی اہل قلم سےدرخواست ہےکہ وہ علامہ محمد یوسف جبریل کےعلمی مشن کےفروغ کےلئےسرگرم عمل ہو جائیں تاکہ طوفانوں میںگھری ہوئی کشتی کو کنارےپرلگایا جا سکی۔علامہ محمد یوسف جبریل ایک حکیم، فلسفی، سائنس دان ہی نہیں بلکہ مقربین اللہ میں سےہیں۔ واہ اور گردونواح میں سخی زندہ پیر بابا ولی قندھاری، علامہ محمد یوسف جبریل، بابا یوسف سرکار ٹیکسلا، بابا بورےشاہ کی موجودگی سےاس علاقہ کی عوام فیوض و برکات سمیٹ رہی ہیں۔ علامہ محمد یوسف جبریل کو پچیس برس کی عمر میں سیدعبدالقادر جیلانی کےدربار گہر بار سےبراہ راست فیض حاصل ہوا۔ اور یہیں سےانہیں ابراہمی مشن عطا ہوا۔ جسےانہوں نےربع صدی تک بخوبی نبھایا۔ ان کےمزار پر دور دور سےلوگ آتےہیں۔
فقیر خاک نشیں اوراس کی جنبشیں پھر اس کےبعد ہوئی سلطنت تباہ میری
حروف کشف کےہیں اور طروف مٹی کے اجڑ سکےگی کسی سےنہ خانقاہ میری

 


Print Friendly, PDF & Email

Download Attachments

Related Posts

  • 84
    علامہ محمدیوسف جبریل لمحہءموجود کےدانش ور فلسفی تحریر محمد عارف ٹیکسلا علامہ محمد یوسف جبریل لمحہ موجود کےبالغ نظر دانشور ، فلسفی، دانائےملت، شاعر اور ادیب تھی۔ آپ نےاپنےرشحاتِ قلم کےذریعے نصف صدی تک امت مسلمہ کےحساس طبقےکو علم و دانش کی روشنی سےمنور کیا۔آپ نےمسلم مفکراور ایٹمی سائنس دان…
  • 83
    مختصر تعارف علامہ محمد یوسف جبریل 17فروری 1917ءکو وادی سون سکیسر ضلع خوشاب میں ملک محمد خان کےگھر پیدا ہوئی۔ یہ وہی تاریخ بنتی ہےجس تاریخ کو بائیبل کےمطابق طوفان نوح آیاتھا ۔اس دور کو بھی ایک طوفان دیکھنا تھا مگر مختلف قسم کا ۔ طوفان نوح آبی تھا مگر…
  • 82
    وقاص شریف ، تلاشِ حقیقت کا شاعر تحریر : محمد عار ف (ٹیکسلا) طالب قریشی، جوگی جہلمی اور تنویر سپرا کی سرزمین وادی جہلم کےدامن میں کھاریاں واقع ہی۔ جہاں کےعلمی و ادبی منظر نامےمیں ایک نئےشاعر وقاص شریف کا ظہور ہواہے۔ وقاص شریف کا شعری مجموعہ ” سازِ دل“…

Share Your Thoughts

Make A comment

Leave a Reply