وادی سون کا قدرتی ماحول تحریر شوکت محمود اعوان

وادی سون کا قدرتی ماحول
تحریر شوکت محمود اعوان
وادی سون کا ماحول ایک قدرتی ماحول ہی۔ جہاں جنگل، پربت وادیاں، ندیاں، نالی، جھیلیں، درختوں کےجھنڈ، آبشاریں، لہلہاتی فصلیں، جنگلی جانور، جنگلی بوٹیاں موجود ہیں۔ یہاں پر جنگلی حیات بھی موجود ہےجو کہ قدرت کی صناعی کےحسین ترین مظاہر میں شامل ہی۔ قدرتی نظاروں اور اللہ تعالیٰ کی بنائی ہوئی حسین مخلوقات کو قریب سےقریب تر دیکھنا اور اس کی افادیت و اہمیت کو محسوس کرنا دل کےلئےایک خوش کن موقع ہوتاہی۔ ہر انسان ایسےفطری ماحول میں ہمیشہ ہمیشہ کےلئےبس جانےکی خواہش تو رکھتا ہی۔ لیکن ایسا کر نہیں سکتا کیوں کہ زندگی کی دوسری اہم ضروریات اس کو ان نظاروں کو محدود کرنےپرمجبور کر دیتی ہیں اور بہت کم خوش نصیب لوگ ہیں جو ایک طویل عرصہ تک ان قدرتی نظاروں کےساتھ دلجمعی سےگذارا کر سکیں۔ علامہ محمد یوسف جبریل کو بھی اپنےعلاقےوادی سون سکیسر سےبہت محبت تھی اور وہ بھی ان نظاروں سےلطف اندوز ہونا چاہتےتھےلیکن روحانی ذمہ داریوں نےان کو ایسا کرنےکا موقع ہی نہیں دیا۔ وہ اس حیاتیاتی مخلوق سےبہت دلچسپی رکھتےتھی۔ ان کی زندگی اور ان کےزندگی کےسفر سےوہ واقف تھی۔ انہوں نےبیالوجی کا مطالعہ کیا ہوا تھا اور دنیا کےبےشمار ملکوں میں سیروسیاحت کےدوران جانوروں اور نباتاتی زندگی کو بہتےقریب سےدیکھاتھا۔ مثلا مشرق وسطی میں شام، مصر، شارجہ، ایران، عراق، فلسطین، کےدور دراز علاقوں اور پہاڑوں پر سیاحت کےدوران انہوں نےجنگلی زندگی کا بھی گہرا مطالعہ کیا۔ حیاتیاتی زندگی کا روحانیت سےبھی گہرا تعلق ہےاور یہ متوکل مخلوق انسان کو روحانیت کی تعلیم سےآگاہی دلاتی ہےاور انسانی زندگی اور ماحولیاتی زندگی کا فرق نمایاں ہوتا ہی۔ یہ بےضرر مخلوق انسان کےلئےخوش اخلاقی اور طمانیت قلب کےمواقع فراہم کرتی ہی۔ تو انسان کی کھانےپینےکی ضروریات کو بھی پورا کرتی ہی۔ اس کےساتھ ساتھ انسان جو آج تک قدرت کےمعاشی اور معاشرتی نظام کو نہیں سمجھ سکا وہ جانور اور پرندےاور جنگلوں کی حیاتیاتی زندگی انسان کو بہت قریب سےسکھا دیتی ہی۔ ان میں ہوس، بغض، حسد اور کینہ جیسی چیزیں نہیں ہوتیں۔ ان کےاندر دوسروں کےلئےقربانی دینےکا جذبہ ہوتا ہی۔ جب کہ انسان خودغرض واقع ہواہی۔ علامہ محمد یوسف جبریل کےگھر کےساتھ جھیل کھبکی موجود تھی۔ اور جب وہ گاو¿ں تشریف لاتےتو اپنےدوستوں کےہمراہ جھیل پر شکار کرتےاور ہرنوں کےشکار کےلئےوادی سون کی پہاڑیوں پر سفر کرتی۔کبھی کبھی شکار مل جاتا اور کبھی خالی مڑنا پڑتا لیکن اس سفر میں بھی ایک دلچسپی قائم تھی۔وادی سون سکیسر کےمکینوں نےجب کھبیکی جھیل کو ختم کرنےکا مطالبہ کیا تو علامہ صاحب نےاس جہاد میں بڑھ چڑھ کر حصہ لیا۔لیکن بعد میں معلوم ہوا کہ اگر اس جھیل کو خالی کر دیا گیا تو ارد گرد کےتمام علاقوں میں پانی نیچےچلا جائےگا اور لوگوں کےلئےایک بہت بڑی پریشانی پیدا ہو جائےگی۔ اس زمانےمیں پانی کی تہہ بہت نیچےچلی گئی تھی۔علامہ صاحب نےہر معاملےمیں وادی سون کی خوشحالی کےلئےکچھ نہ کچھ کام کیا۔ اگرچہ انہیں نہایت ہی برےحالات میں گاو¿ں کو چھوڑنا پڑا۔ یہ ایک الگ کہانی ہی۔
علامہ صاحب نے جانوروں کی نفسیات کا مطالعہ یہاں سےسیکھا۔ جب بھی برطانیہ کی ٹیمیں یہاں آتیں تو سب سےپہلےوہ محمد یوسف کا پوچھتیں اگر وہ وادی سون میں ہوتےتو یہ انگریز ان کو اپنی ٹیم کا حصہ بنا لیتےاور علامہ صاحب بھی بہت خوش ہوتےاور ان کےساتھ گفتگو کرتےاور ان کےہمراہ سفر کرتےاور چونکہ علامہ صاحب صاحبِ علم انسان تھےلہذا انگریز ان کو بہت پسند کرتےتھےاور ساتھ ہی وہ انگریزی زبان پر نہ صرف عبور رکھتےتھےبلکہ انسانی، غیر انسانی مخلوق کی نفسیات کا گہرا مطالعہ بھی ان کےپاس تھا جس کی وجہ سےانگریز ان کےاس علم سےبہت فائدہ اٹھاتےاور بالخصوص کھبکی کی جھیل میں جب مرغابیاں آتیں تو یہ انگریز ان کی سفر کی تاریخیں لکھتےاور انہیں لندن سےچھوڑتےتو یہ دیکھتےکہ کب یہ پاکستان یا انڈیا میں پہنچی ہیں باقاعدہ وہ ان کےپاو¿ں میں لوہےکےچھوٹےچھوٹےکڑےڈالتےاور ان پر نمبر اور تاریخ بھی لکھتے۔ بعد میں یہ دیکھتے کہ یہ مخلوق کتنےعرصےمیں لندن سےیہاں وادی سون میں پہنچی ہی۔اور دوسری جھیلوں کےبارےمیں بھی وہ یہ معلومات اکٹھی کرتےاور موسمیات پر اپنی معلومات مکمل کرتی۔ وہ عجیب و غریب تجربےکیا کرتےتھی۔ تاہم ان کو ارضیات سےبہت دلچسپی تھی۔ جڑی بوٹیوں کےبارےمیں علامہ صاحب کےپاس گہرا علم تھا ۔ علامہ صاحب انگریزوں کو ان کی افادیت سےآگاہ کرتےاور میڈیسن میں استعمال ہونےوالی جڑی بوٹیوں کےبارےمیں انگریز کو آگاہی ملتی تو اس سےاستفادہ کیا جاتا۔ مقامی لوگوں کو اس بات کا علم تھا کہ علامہ محمد یوسف جبریل سونا بنانےکا علم رکھتےہیں۔ لیکن وہ دنیاوی سہولتوں سےبہت دور تھےان کا مشن ہی کچھ اور تھا۔
شوکت محمود اعوان جنرل سیکرٹری ادارہ تحقیق الاعوان پاکستان، نواب آباد واہ کینٹ wwwoqasa.org www.allamayousuf.net


Print Friendly, PDF & Email

Attachments

Related Posts

  • 89
    حطمہ کی اہمیت پر نقاط تحریر شوکت محمود اعوان 1962 ءمیں علامہ محمد یوسف جبریل کو قرآن حکیم میں حطمہ( ایٹمی سائنس اور قران حکیم )کےبارےمیں انکشاف ہوا ۔ حطمہ کےبارےمیں آقا نبی کریم اور صحابہ کرام کےارشادات موجود ہیں۔ بعد میں مفسرین کرام نےاس پر خصوصی تحقیق کی اور…
  • 85
    علامہ محمد یوسف جبریل ایک جائزہ تحریر محمد عارف علامہ یوسف جبریل کی زندگی پر بہت کچھ لکھاجاسکتا ہی۔ وہ سال ہاسال سےمسلمانان عالم کو بیدار کرنےمیں مصروف عمل رہی۔ وہ قرانی تعلیمات کی روشنی میں دنیاکو امن اور سلامتی کا پیغام دیتےرہےہیں۔ علامہ یوسف جبریل کی شخصیت نہایت عجیب…
  • 81
    محمد عارف کےحالات زندگی تحریر شوکت محمود اعوان واہ کینٹ نام محمدعارف ولدیت میاں محمد سال پیدائش 16 فروری 1969 مستقل پتہ گاو¿ں پنڈ فضل خان، تحصیل فتح جنگ، ضلع اٹک موجودہ پتہ I-R-36 ، نزد جنجوعہ ٹریڈرز، اعوان مارکیٹ فیصل شہید ٹیکسلا نمبر رابطہ 03335465984 تعلیمی کوائف:۔ ١۔ پرائمری…
  • 81
    مختصر تعارف علامہ محمد یوسف جبریل 17فروری 1917ءکو وادی سون سکیسر ضلع خوشاب میں ملک محمد خان کےگھر پیدا ہوئی۔ یہ وہی تاریخ بنتی ہےجس تاریخ کو بائیبل کےمطابق طوفان نوح آیاتھا ۔اس دور کو بھی ایک طوفان دیکھنا تھا مگر مختلف قسم کا ۔ طوفان نوح آبی تھا مگر…
  • 77
    ”چراغِ راہ“ تحریر : محمد عارف ٹیکسلا واصف علی واصف نےایک دفعہ کہا تھا کہ ” ہم زندگی بھر زندہ رہنےکےفارمولےسیکھتےرہتےہیں اور زندگی جب اندر سےختم ہو جاتی ہےتو ہم بےبس ہو جاتےہیں۔ کیونکہ ہم نےموت کا فارمولا سیکھا ہی نہیں ہوتا۔ اسلا م نےبامقصد زندگی کےساتھ بامقصد موت کا…
  • 77
    وادی سون کی معروف روحانی شخصیات کا تذکرہ تحریر ملک محمد شیر اعوان وساوال ۔ کہتےہیں کہ قدرت جب کسی سےکوئی مخصوص کام لینا چاہتی ہی۔ تو اس کام کےلئےاسی قوم میںسےمخصوص افراد کو چن لیتی ہی۔ جو اس کام کی انجام دہی میں شب و روز ایک کر دیتےہیں۔…
  • 76
    وادی سون سکیسر کی تاریخ اور ثقافت کا تحقیقی جائزہ : تحریر : شوکت محمود اعوان ملک محمد سرور اعوان وادی سون سکیسر نوشہرہ کی ایک مشہور و معروف شخصیت ہو گزری ہیں۔ وہ تحقیقی دنیا میں اعلیٰ شہرت رکھنےوالی شخصیت تھیں۔ملک صاحب نےاپنی ساری عمر علم و تعلم میں…
  • 74
    علامہ محمد یوسف جبریل ،وادی سون اور انگریز کی نوکری تحریر : شوکت محمود اعوان جب تک انگریز دنیا کی سپر پاور بن کر دنیا پر حکمرانی کرتےرہی۔ تو ان کی مقبوضات میں شامل ہندوستان کا ایک کوہستانی علاقہ بھی ان کی فوج کےلئےایندھن کا کام دیتا رہا۔ یہ پنجاب…
  • 71
    بسم اللہ الرحمن الرحیم اللھم صلی علی محمد و علی آلہ و اصحابہ و اھل بیتہ و ازواجہ و ذریتہ اجمعین برحمتک یا الرحم الرحمین o توحید اور تولید قرآن و سنت کی روشنی میں (ایک تقابلی جائزہ ) پیش لفظ ان صفحات میں ایک حقیر اور ادنیٰ سی کوشش…
  • 70
    بابا جی یحییٰ خان سےایک ملاقات تحریر : محمد عارف یہ جون کی ایک کڑکتی ہوئی دوپہر تھی کہ جب میرےمحترم دوست شوکت محمود اعوان (واہ کینٹ) نےمجھےبتایا کہ میرےایک دوست (سعید صاحب ) ٹریول لاج ، ٥ سڑکی پٹرول پمپ ، سکالر کالج ، پی سی ہوٹل کےنزدیک صدر…
  • 70
    وقاص شریف ، تلاشِ حقیقت کا شاعر تحریر : محمد عار ف (ٹیکسلا) طالب قریشی، جوگی جہلمی اور تنویر سپرا کی سرزمین وادی جہلم کےدامن میں کھاریاں واقع ہی۔ جہاں کےعلمی و ادبی منظر نامےمیں ایک نئےشاعر وقاص شریف کا ظہور ہواہے۔ وقاص شریف کا شعری مجموعہ ” سازِ دل“…
  • 70
    علامہ محمد یوسف جبریل اور علامہ محمداقبال۔ چند فکری مباحث تحریر محمدعارف علامہ محمد یوسف جبریل شعرا میں شمار نہیں ہوتےاور نہ ہی درحقیقت ان کا میدان شاعری ہےمگر اس امر سےانکار نہیں کیا جا سکتا کہ وہ علامہ محمد اقبال کی فکر تازہ اور اسلوب فن سےگہری مماثلت رکھتےہیں۔…
  • 70
    وادی سون سکیسر کی ایک عظیم ادبی شخصیت ۔ ملک خدابخش مسافر تحریر : ملک شوکت محمود اعوان وادی سون سکیسرنےبےشمار ادیب، شاعر، عالم، فاضل، مفسر، مقرر، دیندار،سائنس دان، فلسفی، ولی اللہ،مجاہد،فوجی افسر اور فوجی جوان، ٹیچر، زاہد، عابد اور علمائےکرام کو جنم دیا ہی، ان میں ہم جس شخصیت…
  • 69
    وادی سون کی پراسرار روحانی شخصیات تحریر: شوکت محمود اعوان وادی سون سکیسر کا چپہ چپہ اولیائےکرام اور روحانی شخصیات کےنور سےچمک رہا ہی۔ وادی کےایک کونےسےلےکردوسرےکونےتک یہ روحانی شخصیات مختلف ادوار میں اپنی اپنی روحانی ذمہ داریاں اور فرائض سرانجام دےکراب نہایت پرسکون انداز سےانسانی نسلوں کےلئےایک روشن دلیل…
  • 68
    ”وادی سون سکیسر تاریخ و ثقافت “ کےمصنف ملک محمدسرور اعوان کا سوانحی خاکہ تحریر : ملک شوکت محمود اعوان پیدائش کب اور کہاں ہوئی ۔ ملک محمد سرور اعوان کی پیدائش وادی سون سکیسر کےایک مشہور گاو¿ں نوشہرہ میں ٦ مئی 1911ءکو ہوئی۔نوشہرہ وادی سون سکیسر کا مرکزی قصبہ…
  • 68
    ہر انسان کو اللہ تعالی نےکوئی نہ کو ئی خوبی عطا کی ہوتی ہےاور یہ کہ ہر انسان میں بہت سی پوشیدہ صلاحیتیں ہوتی ہیں ۔لیکن اگر بہت سی صلاحتیں اور خوبیاں ایک انسان میں یکجاہوجائیں تو یہ کمال حیرانی کی بات ہوتی ہےاگر انسان اپنےاندر پائی جانےوالی ان ایک…
  • 67
    تصوف کی طاقت تحریر: شوکت محمود اعوان علامہ محمد یوسف جبریل فرماتےہیں :۔ ” ادھر چین ری ایکشن ہوا۔ ادھر ہم کو تیار کر دیا“۔ مزےکی بات یہ ہےکہ علامہ جبریل صاحب کسی بھی یونیورسٹی کےسٹودنٹ نہیں اور نہ ہی انہوں نےکسی کالج یونیورسٹی سےسائنسی تعلیم حاصل کی بلکہ جو…
  • 67
    حج دا سفر نامہ تحریر: محمدعارف (ٹیکسلا) ڈاکٹر سید عبداللہ ”سرزمینِ حافظ و خیام از مقبول بیگ بدخشانی “ میں رقم طراز ہیں کہ ” ایک کامیاب سفر نامہ وہ ہوتا ہےجو صرف ساکت و جامد فطرت کا عکاس نہ ہو بلکہ لمحہءرواں میں آنکھ، کان ، زبان اوراحساس سےٹکرانےوالی…
  • 66
    ”حالِ فقیر“ (محمد عارف ٹیکسلا) گروپ کیپٹن(ر) شہزاد منیر سےٹیلی فون پر رابطہ ہوا۔ تو وہ مجھےپہلےسےہی جانتےتھی۔ میں نےانہیں اپنی اس خواہش سےآگاہ کیا کہ میں ڈاکٹر تصدق حسین کےبارےمیں کچھ خیالات کا اظہار کرنا چاہتا ہوں جنہیں ”حالِ فقیر “میں شامل کر لیا جائےتو میرےلئےسعادت کی بات ہو…
  • 66
    وادی سون کاتعارف تحریر : شوکت محموداعوان پاکستان کی حسین و جمیل وادیوں میں وادی سون دلفریب مناظر کی حامل ایک مشہور وادی ہی۔ یہ وادی کوہستان نمک کےعلاقےکا حصہ ہےاور اپنےقدرتی مناظر ، خوش گوار ماحول، ٹھنڈےموسم اور زمین میں معدنیات کےبھر پور خزانوں سےمزین مشہور وادی ہی۔ اس…

Share Your Thoughts

Make A comment

Leave a Reply

Copied!