وادی سون کی پراسرار روحانی شخصیات تحریر شوکت محمود اعوان

وادی سون کی پراسرار روحانی شخصیات
تحریر: شوکت محمود اعوان
وادی سون سکیسر کا چپہ چپہ اولیائےکرام اور روحانی شخصیات کےنور سےچمک رہا ہی۔ وادی کےایک کونےسےلےکردوسرےکونےتک یہ روحانی شخصیات مختلف ادوار میں اپنی اپنی روحانی ذمہ داریاں اور فرائض سرانجام دےکراب نہایت پرسکون انداز سےانسانی نسلوں کےلئےایک روشن دلیل بنےہوئےہیں۔ تقریباََ بائیس یا کم و بیش گاو¿ں پر مشتمل یہ وادی مادہ پرستی، کےبےہنگم دو ر سےدور بلکہ کوسوں دور، روحانی ارتقاءکی کڑیاں جوڑتی رہی ہی۔ محمود غزنوی کےساتھ آئےہوئےمجاہدین نےاسلامی عظمت کی جو بنیاد رکھی تھی وہ اگرچہ تاریخ کا ایک نمایاں باب ہےتاہم اس کےبعد بھی بےشمار شخصیات نےاس خطےمیں جنم لیا اور انسانیت کو روحانیت کےاعلیٰ معیار سےہمکنار کیا۔ یہ لوگ دن کو اپنی کھیتی باڑی میں مصروف رہتےتھےاور رات کا اکثر حصہ یاد الہیٰ میں مصروف رہتا تھا۔ یہ علاقہ روحانی عظمتوں کا گہوارہ رہا ہے۔ اس کی واضح نشانی یہ ہےکہ اس علاقہ میں چار سلطان العارفین آج بھی تاریک دلوں کو روحانی روشنی،رشد و ہدایت سےہمکنار کر ہےہیں اور طالب ان سےبہت کچھ حاصل کر تےہیں ۔ تاہم طلب کی حقیقی کروٹ انسان کےدل میں ضروری موجزن ہونی چاہیئی۔ محققین نےانہیں روحانی شخصیات کےبارےمیں کچھ تاریخ مرتب کی ہی۔ جن کےبارےمیں انہیں معلوامات میسر آ سکیں تاہم بےشمار اولیائےکرام اب بھی وادی سون میں آج بھی مدفون ہیں جن کےبارےمیں اتنا معلوم ہےکہ وہ اپنےدور کی عظیم روحانی شخصیات تھیں۔ واقعات، حالات اور تاریخی مدارج کےبارے میں قطعی طور پر ان کےبارےمیں معلومات مہیا نہیں ہوئیں۔ کچھ روایات سینہ بہ سینہ ہم تک منتقل ہو ئی ہیں۔ تاہم یہ بہت بڑا المیہ ہےکہ ان شخصیات کی روحانی عظمت و سطوت کےبارےمیں ہمیں بہت کم معلوم ہی۔ حتیٰ کہ ان کےنام تک سےہم ناواقف ہیں۔ صرف ان کی روحانی عظمت مقام، اور جگہ کےاور معروفی نام کےحوالےسےپہچانی جاتی ہی۔اور ان کےاصلی نام کی جگہ ان کےروحانی القاب ہمیں ان سےشناسائی کی دعوت دیتےہیں۔ میں نےخود ان بزرگوں کی قبروں پر حاضری دی ہےاور جتنےلمحات بھی وہاں گزارےہیں۔ عجیب روحانی کیفیت سےدوچار رہا ہوں۔ میرےدل میں ان کی روحانی عظمت بڑھتی رہی ہی۔ واقعی وہ عظیم لوگ تھےجنہوں نےزندگی کا ایک ایک لمحہ اللہ تعالی ٰکی یاد میں گذارا ہی۔ میرےبچپن کا ایک واقعہ مجھےاب بھی یاد ہے۔ میں اور میرا بھائی طاہر محمود اپنےگھر موضع کھبکی میں کھیل رہےتھی۔ کھیلتےکھیلےایک چھوٹا سا پتھر بھائی کےدائیں فوطےپر لگ گیا۔ جس کی وجہ سےاس کےفوطےمیں زخم آ گیا۔ جس کی وجہ سےاسےشدید درد شروع ہو گیا ۔جس کی وجہ سےہمارےماں باپ کافی پریشان رہتےتھی۔ ایک روز میرےوالد محترم میرےبھائی کو لاہور کےکسی قابل ڈاکٹر کےپاس لےگئی، جس نےمعائنہ کرنےکےبعد آپریشن لکھ دیا اور کہا کہ سوائےآپریشن کےاس مرض کا کوئی علاج نہیں۔ ناچار والد محترم اس کو واپس گاو¿ں لےآئےکیوں کہ والدہ محترمہ اپریشن نہیں کروانا چاہتی تھیں۔ انہوں نےکہا کہ اوپریشن کی ضرورت نہیں، اسےبابا سخی محمد خوشحال بابا کی قبر مبارک پر تین جمعرات کےلئےلےجاتےہیں سلام کرواتےہیں ۔اور انشاءاللہ یہ ٹھیک ہو جائےگا۔ پھر ہم نےتین جمعرات تک مسلسل حضرت سخی محمد خوشحال کےروضہ مبارک گاو¿ں دھدھڑ وادی سون سکیسر پر حاضری دی۔ اور پھر خدا کےفضل و کرم سےیہ تکلیف رفع ہو گئی اور آج تک کبھی بھی چھوٹےبھائی کو یہ عارضہ لاحق نہیں ہوا۔ حضرت سخی محمد خوشحال وادی سون سکیسر کی عظیم روحانی شخصیت ہیں۔ ہم صبح سویرےجب کہ ابھی اذانیں بھی نہیں ہوتی تھیں اور لوگ پر سکون نیند میں ہوتے،میں اور میرا چھوٹا بھائی حضرت سخی محمد خوشحال کےآستانہ عالیہ کی طرف روانہ ہو جاتے۔ میں ان دنوں شائد ساتویں جماعت میں کھبیکی کےسکول میں پڑھتا تھا۔اور نو عمر تھا۔ رات کےگھپ اندھیرےمیں جب ہم کھبکی گاو¿ں سےنکل کے گاو¿ں کی جھیل کےساتھ ملحقہ قبرستان سےگذرتےتو ہمارا دل دہل جاتا۔ رات کی تاریکی کےساتھ ساتھ قبرستان کی فطرتی پر اسرار خاموشی ہمارےننھےمنھےذہنوں پر کافی اثر انداز ہوتی البتہ ڈرتےڈرتےہم اس قبرستان سےگذر جاتی۔ تاہم پیچھےپیچھےضرور دیکھتےجاتے اور عجیب خوف سا ذہنون پر مسلط رہتا۔ ہم صبح سویرےاس لئےنکل جاتےکہ ہمارےگاو¿ں کھبیکی سےموضع دھدھڑتقریباََ تین میل کےفاصلےپر ہےاور آنےجانےمیں کافی وقت کی ضرورت تھی اور پھر ہمیں سکول بھی جانا ہوتا تھا۔ راستےمیں ہم جس قبرستان (قہوےوالا قبرستان) سےگذرتے۔ یہ قبرستان قہوےوالا قبرستان کہلاتا ہےاور بہت قدیمی قبرستان ہے۔اس میں معروف شخصیات مدفون ہیں۔بابا خود ایک جری اور سخت مزاج کا مالک ہونےکےحوالےسےپہچانا جاتاہےاور کئی واقعات ایسےرونما ہوئےجن کی وجہ سےیہ شواہد صحیح ثابت ہوئےکہ حضرت قہوےوالا فقیر سخت مزاج بزرگ ہیں اور کوئی شخص قبرستان کی بےحرمتی کرےتو اسےسخت سزا بھگتنا پڑتی ہے۔کوئی شخص رات کےوقت اس قبرستان سےگذرنےکی جسارت نہیں کر سکتا تھا۔ بھلا ہم دو بچےکہاں اتنی جرات کر سکیں تاہم یہ مجبوری تھی اور اس کےعلاوہ کوئی اور راستہ بھی نہیں تھا۔ جہاں سےہم گذر جاتےکیوں کہ دور دور تک پانی کی ایک جھیل پھیلی ہوئی تھی اور یہ جھیل اب اس قبرستان کےقریب پہنچ چکی ہی۔ ہم نےایک رات عجیب تماشہ دیکھا ۔ میں آگےآگےاور میرا بھائی طاہر پیچھےپیچھے، خوف زدہ حالت میں جا رہےتھےجب ہم قبرستان کےقریب پہنچےتو حضرت قہوےوالےبزرگ کی قبر سی” اللہ ہو،ہو اللہ“ کی پراسرار آواز ا رہی تھی۔ یہ آواز اس قدر مافوق الفطرت اور پرسرار تھی کہ ہمارےدل دہل گئی۔ یہ آواز تھوڑےتھوڑےعرصےکےبعد سنائی دیتی تھی جیسا کہ کوئی شخص وقفےوقفےسےذکر کر رہا ہو لیکن اس میں مافوق الفطرت پہلو زیادہ واضح تھا۔ اور ایسا معلوم ہوتا تھا کہ پوری وادی سون کیا پوری کائنات اس لفظ ”ہو’‘ کی بازگشت دےرہی ہی۔ رات کاعالم، تاریکی، خوف اور پرسرار آواز ” ھو“ کی آواز آج بھی میرےکانوں میں سنائی دےرہی ہےاور جب بھی میں بابا جی قہوےوالےقبرستان سےگذرتا ہوں تو مجھےبچپن کا یہ واقعہ یا ا جاتا ہی۔ اور میں بےاختیار بابا جی کےقدموں میں سلام کےلئےچلا جاتا ہوں۔


Print Friendly, PDF & Email

Attachments

Related Posts

  • 75
    واہ قدیم شہر ٹیکسلا کےسنگم پر واقع ہی۔ ازمنہءقدیم میں ٹیکسلا گندھارا تہذیب کی راجدھانی رہا ہی۔ دور دراز سےتجارتی قافلےآتی، یہاں پر پڑاوکرتےاور اہل ہنر و صاحبان سیف و قلیم کا بھی یہاں پر اجتماع رہتا۔ ایک زمانےمیں علم و ہنر کےحوالےسےٹیکسلا کا پورےعالم میں ڈنکا بجتا تھا اور…
  • 72
    حطمہ کی اہمیت پر نقاط تحریر شوکت محمود اعوان 1962 ءمیں علامہ محمد یوسف جبریل کو قرآن حکیم میں حطمہ( ایٹمی سائنس اور قران حکیم )کےبارےمیں انکشاف ہوا ۔ حطمہ کےبارےمیں آقا نبی کریم اور صحابہ کرام کےارشادات موجود ہیں۔ بعد میں مفسرین کرام نےاس پر خصوصی تحقیق کی اور…
  • 72
    مختصر تعارف علامہ محمد یوسف جبریل 17فروری 1917ءکو وادی سون سکیسر ضلع خوشاب میں ملک محمد خان کےگھر پیدا ہوئی۔ یہ وہی تاریخ بنتی ہےجس تاریخ کو بائیبل کےمطابق طوفان نوح آیاتھا ۔اس دور کو بھی ایک طوفان دیکھنا تھا مگر مختلف قسم کا ۔ طوفان نوح آبی تھا مگر…
  • 71
    محمد عارف کےحالات زندگی تحریر شوکت محمود اعوان واہ کینٹ نام محمدعارف ولدیت میاں محمد سال پیدائش 16 فروری 1969 مستقل پتہ گاو¿ں پنڈ فضل خان، تحصیل فتح جنگ، ضلع اٹک موجودہ پتہ I-R-36 ، نزد جنجوعہ ٹریڈرز، اعوان مارکیٹ فیصل شہید ٹیکسلا نمبر رابطہ 03335465984 تعلیمی کوائف:۔ ١۔ پرائمری…
  • 71
    ہر انسان کو اللہ تعالی نےکوئی نہ کو ئی خوبی عطا کی ہوتی ہےاور یہ کہ ہر انسان میں بہت سی پوشیدہ صلاحیتیں ہوتی ہیں ۔لیکن اگر بہت سی صلاحتیں اور خوبیاں ایک انسان میں یکجاہوجائیں تو یہ کمال حیرانی کی بات ہوتی ہےاگر انسان اپنےاندر پائی جانےوالی ان ایک…
  • 70
    علامہ محمد یوسف جبریل ،وادی سون اور انگریز کی نوکری تحریر : شوکت محمود اعوان جب تک انگریز دنیا کی سپر پاور بن کر دنیا پر حکمرانی کرتےرہی۔ تو ان کی مقبوضات میں شامل ہندوستان کا ایک کوہستانی علاقہ بھی ان کی فوج کےلئےایندھن کا کام دیتا رہا۔ یہ پنجاب…
  • 70
    وادی سون کی معروف روحانی شخصیات کا تذکرہ تحریر ملک محمد شیر اعوان وساوال ۔ کہتےہیں کہ قدرت جب کسی سےکوئی مخصوص کام لینا چاہتی ہی۔ تو اس کام کےلئےاسی قوم میںسےمخصوص افراد کو چن لیتی ہی۔ جو اس کام کی انجام دہی میں شب و روز ایک کر دیتےہیں۔…
  • 69
    اپنی موج میں ،اپنی دُھن میں ،بہتا بولتا رہتا ہے تحریر : شمشیر حیدر جب ہر طرف اندھیرا ہی اندھیرا ہوتو ایسےمیںاگر ایک جگنو بھی چمکتا دکھائی دےتو حوصلہ ہونےلگتا ہے،کچھ کچھ اپنےہونےکےنشاں کھلنےلگتےہیں اور وحشتوں کےفریب میں کمی آنےلگتی ہے۔ہم ایسےعہدِبےچراغ میں زندہ ہیںکہ جب ہرآدمی زندگی جبرِمسلسل کی طرح…
  • 69
    وادی سون کا قدرتی ماحول تحریر شوکت محمود اعوان وادی سون کا ماحول ایک قدرتی ماحول ہی۔ جہاں جنگل، پربت وادیاں، ندیاں، نالی، جھیلیں، درختوں کےجھنڈ، آبشاریں، لہلہاتی فصلیں، جنگلی جانور، جنگلی بوٹیاں موجود ہیں۔ یہاں پر جنگلی حیات بھی موجود ہےجو کہ قدرت کی صناعی کےحسین ترین مظاہر میں…
  • 69
    ”چراغِ راہ“ تحریر : محمد عارف ٹیکسلا واصف علی واصف نےایک دفعہ کہا تھا کہ ” ہم زندگی بھر زندہ رہنےکےفارمولےسیکھتےرہتےہیں اور زندگی جب اندر سےختم ہو جاتی ہےتو ہم بےبس ہو جاتےہیں۔ کیونکہ ہم نےموت کا فارمولا سیکھا ہی نہیں ہوتا۔ اسلا م نےبامقصد زندگی کےساتھ بامقصد موت کا…
  • 68
    علامہ محمد یوسف جبریل ایک جائزہ تحریر محمد عارف علامہ یوسف جبریل کی زندگی پر بہت کچھ لکھاجاسکتا ہی۔ وہ سال ہاسال سےمسلمانان عالم کو بیدار کرنےمیں مصروف عمل رہی۔ وہ قرانی تعلیمات کی روشنی میں دنیاکو امن اور سلامتی کا پیغام دیتےرہےہیں۔ علامہ یوسف جبریل کی شخصیت نہایت عجیب…
  • 67
    وقاص شریف ، تلاشِ حقیقت کا شاعر تحریر : محمد عار ف (ٹیکسلا) طالب قریشی، جوگی جہلمی اور تنویر سپرا کی سرزمین وادی جہلم کےدامن میں کھاریاں واقع ہی۔ جہاں کےعلمی و ادبی منظر نامےمیں ایک نئےشاعر وقاص شریف کا ظہور ہواہے۔ وقاص شریف کا شعری مجموعہ ” سازِ دل“…
  • 67
    ”وادی سون سکیسر تاریخ و ثقافت “ کےمصنف ملک محمدسرور اعوان کا سوانحی خاکہ تحریر : ملک شوکت محمود اعوان پیدائش کب اور کہاں ہوئی ۔ ملک محمد سرور اعوان کی پیدائش وادی سون سکیسر کےایک مشہور گاو¿ں نوشہرہ میں ٦ مئی 1911ءکو ہوئی۔نوشہرہ وادی سون سکیسر کا مرکزی قصبہ…
  • 67
    ”کن فیکون“ پر خواجہ محمد عرفان ایوب کریمی کا تبصرہ ”کن فیکون“ نامی کتاب تحریر محمد عارف میں ملک شوکت محموداعوان نےمندرجہ مضمون میں اپنےوالد محترم کی شخصیت کےمختلف پہلو اجاگر کئےہیں۔ بہر حال شوکت محمود اعوان کو یہ اعزاز حاصل ہےکہ انہوں نےاپنےوقت کےعظیم دانش ور کی خدمت کا…
  • 66
    Introduction of shaukat m awan gen. secretary adara tehqiqul awan pakistan President Yousuf Jibreel Foundation sarparast ala bazme afqare gabriel wah cantt editor coordinator weekly watan islamabad شوکت اعوان شخصیت اور خدمات تحریر محمد عارف ١۔ شوکت محمود اعوان گیارہ نومبر انیس سو ترپن 11-11-1953میں بمقام کھبیکی وادی سون سکیسر…
  • 66
    Back to Kuliyat e Gabriel نعرہ ء جبریل ( 1) روحِ اقبالؒ ہوں میں حیرتِ جبریل بھی ہوں برقِ خاطف کی تجلی میں ابابیل بھی ہوں ریگِ بطحا میں نہاں شعلہء قندیل بھی ہوں فتنہءِ دورِ یہودی کے لئے نیل بھی ہوں خاک ہوں پائے غلامانِِ محمد ﷺ کی یہ…
  • 66
    بابا جی یحییٰ خان سےایک ملاقات تحریر : محمد عارف یہ جون کی ایک کڑکتی ہوئی دوپہر تھی کہ جب میرےمحترم دوست شوکت محمود اعوان (واہ کینٹ) نےمجھےبتایا کہ میرےایک دوست (سعید صاحب ) ٹریول لاج ، ٥ سڑکی پٹرول پمپ ، سکالر کالج ، پی سی ہوٹل کےنزدیک صدر…
  • 65
    وادی سون سکیسر کی ایک عظیم ادبی شخصیت ۔ ملک خدابخش مسافر تحریر : ملک شوکت محمود اعوان وادی سون سکیسرنےبےشمار ادیب، شاعر، عالم، فاضل، مفسر، مقرر، دیندار،سائنس دان، فلسفی، ولی اللہ،مجاہد،فوجی افسر اور فوجی جوان، ٹیچر، زاہد، عابد اور علمائےکرام کو جنم دیا ہی، ان میں ہم جس شخصیت…
  • 65
    وادی سون کاتعارف تحریر : شوکت محموداعوان پاکستان کی حسین و جمیل وادیوں میں وادی سون دلفریب مناظر کی حامل ایک مشہور وادی ہی۔ یہ وادی کوہستان نمک کےعلاقےکا حصہ ہےاور اپنےقدرتی مناظر ، خوش گوار ماحول، ٹھنڈےموسم اور زمین میں معدنیات کےبھر پور خزانوں سےمزین مشہور وادی ہی۔ اس…
  • 64
    وادی سون سکیسر کی تاریخ اور ثقافت کا تحقیقی جائزہ : تحریر : شوکت محمود اعوان ملک محمد سرور اعوان وادی سون سکیسر نوشہرہ کی ایک مشہور و معروف شخصیت ہو گزری ہیں۔ وہ تحقیقی دنیا میں اعلیٰ شہرت رکھنےوالی شخصیت تھیں۔ملک صاحب نےاپنی ساری عمر علم و تعلم میں…

Share Your Thoughts

Make A comment

Leave a Reply

Copied!