چراغِ وقت احترام آد میت سے عبارت ہے تحریر فتح محمد ملک صاحب October 5, 2015

بابا عنایت اللہ صوفی ہیں مگر تارک الدنیا نہیں۔مجھے انکی یہ ادا بہت پسند ہے۔وہ طریقت اور معرفت کے اس مسلک سے وابستہ ہیںجو اس مادی دنیا کو روحانی روشنی سے نور۔‘ علیٰ نور کر دینا چاہتے ہیں۔یہ تمنا اس وقت تک پوری نہیں ہو سکتی،جب تک ذاتی مجاہدہ ء نفس اجتماعی زندگی میں پیوست […]

Comments (0) Read more
فلیپ برا ئےچراغِ وقت تحریربانو قدسیہ صاحبہ October 5, 2015

ہر معاشرے میں گروہ در گروہ مختلف النوع لوگ اپنے اپنے نظریات میں مقید، مختلف راہیں اختیار کرتے ہیں۔انکی سرشت،ماحولیات،رنگ روپ،طبقاتی بانٹ اور اندر صاف اور گندے لہو کا بہنا اسی بات کا مقتضی ہوتا ہے کہ وہ اپنی فردیت اور اپنے گروہ کی یکجائی کیلئے سر گرداں رہیں۔اسی میں انسانی بقا اور اسکے ارتقاء […]

Comments (1) Read more
یوم حساب قریب ہے October 5, 2015

زیر نظر کتاب’’ نسخہ ء انقلاب وقت‘‘ عنایت اللہ صاحب کی ساتویں کتاب ہے۔ اس سے قبل انکی شائع ہونے والی کتابوں میں درج ذیل کتب شامل ہیں:۔ ۱۔آئینہ وقت۔۲۔صدائے وقت۔۳۔ندائے وقت۔۴۔آوازوقت۔۵۔ناد وقت۔ ۶ ۔ چراغ وقت مصنف نے اس کتاب میںبہت سے سوال اٹھائے ہیں،ا ن میں سب سے اہم سوال یہ ہے کہ […]

Comments (1) Read more
انقلابِ وقت October 2, 2015

سلسلہ واصفیہ کے رکن اعظم عنایت اللہ! صاحب قلم بھی ہیں صاحب نظر بھی۔درد مند بھی اور قومی حوالے سے درد مند ۔جب بھی لکھا قومی سلسلہ پر لکھا۔عاجز ایسے نام سے کام نہیں رکھا،صرف کام کیا اور مسلسل کام کیا۔واصف صاھب قبلہ نے تو عنایت اللہ صاحب کے یہ مضامین نہیں دیکھے تھے مگر […]

Comments (0) Read more
پیش لفظ نادِوقت October 2, 2015

برادر عزیز ڈاکٹر تصدق حسین راجہ کا میں تہہ دل سے ممنون ہوں۔ کہ ان کی وساطت سے ایک مرد خود آگاہ اور درویش خدامست سے اکتساب فیض کی سعادت نصیب ہوئی۔ میرا اشارہ جناب عنایت اللہ صاحب کی جانب ہے، جنہوں نے ایک طویل عرصہ تک عہد حاضر کے عظیم مفکرحضرت واصف علی واصف  […]

Comments (0) Read more
تبصرہ نادِوقت October 2, 2015

یہ ۱۹۹۷ ء کا ذکر ہے۔ مجھے پروفیسر واصف علی واصف صاحب  پر کچھ لکھنے کا شوق ہوا۔ تو جناب اشفاق احمد صاحب کو لاہور خط لکھا تاکہ اس سلسلے میں رہنمائی حاصل کر سکوں۔ چند روز بعد جواب آیا۔ حضرت واصف علی واصف کے بارے میں کچھ یادیں میرا بھی سرمایۂ افتخار ہیں۔ لیکن […]

Comments (0) Read more
ہم نہیں جانتے October 2, 2015

اشفاق احمد داستان سرائے ۱۲۱ سی ماڈل ٹاؤن،لاہور۔ ہم عنائیت کو نہیں جانتے ۔ مگر وہ ہمیں اور ہمارے مسائل کو بڑ ی اچھی طرح سے جانتا ہے۔زیر نظر کتاب سے پہلے ’’ آئینہ وقت ‘‘، ’’صدائے وقت‘‘ ، ’’ندائے وقت ‘‘ ، ’’ آواز وقت ‘‘ ، چار کتابچے لکھ کر ہمارے مسائل کی […]

Comments (0) Read more
فلیپ برائے نا د وقت October 2, 2015

  انسانی ارتقاء تبدیلی کے بغیر ممکن نہیں۔ تبدیلی ماحول کی ہو، نظریات کی ہو یا خیالات کی، اس سے کئی مسائل جنم لیتے ہیں۔ بنیادی مشکل انسان کو ہر لحظہ درپیش رہتی ہے۔ وہ چاہے تبدیلی کاخیر مقدم کرے۔ یااسے کلی طور پر رد کر دے۔ ہر مقام پراسے دوئی کا سامنارہتا ہے۔ وہ […]

Comments (0) Read more
چڑیا گھر کاالیکشن October 2, 2015

  علامہ یوسف جبریل ایک ایسےقلمکار ہیں جنہیں طویل کہانی اور فن کےرچا و میں ایک کمال حاصل ہی انہوں نےزندگی کو بہت قریب سےدیکھا ہےاس لئےوہ انسانی کرداروں کےرویوں ، ان کےلہجےاور نفسیاتی اشاروں سےکماحقہ واقف ہیں انہوں نےبڑی چابکدستی کےساتھ انسانی کرداروں کےبدلتےرنگوں اور تہذیبی عوامل کو اپنی گرفت میں لےکرایک ممتاز تخلیق کو […]

Comments (0) Read more
علامہ محمد اقبال اور علامہ محمد یوسف جبریل چندفکری مماثلتیں September 14, 2015

علامہ محمد اقبال ترجمان حقیقت ،شاعر مشرق اور حکیم الامت فلسفی شاعر کی حیثیت سےنہ صرف اسلامی جمہوریہ پاکستان بلکہ پورےعالم اسلام میں جانےپہچانےجاتےہیں۔ آپ نےاردو کی کلاسیکی شاعری کےمخصوص استعارات اور تلازمہ کاری کو مسلم تشخص، احساس خودی، ملت اسلامیہ کےعروج کےلئےاستعمال کیا ۔ علامہ محمد اقبال نےتاریخ اسلام ، سیاسیات ، مذہبیات اور […]

Comments (0) Read more
سوز جبریل September 7, 2015

خطہء فردوسِ بریں واہ کینٹ کی ادبی تاریخ پر نظر ڈالیں تو دنیائےعلم و ادب کےبےشمار ستارےجگمگ جگمگ کرتےنظر آتےہیں۔شعراءو ادباءنےمختلف ادبی تنظیموں کےذریعےمحفل شعر و سخن کو آراستہ و پیراستہ رکھا جن میں فانوسِ ادب ملک گیر شہرت کی حامل تنظیم رہی ہی۔ جس کےپلیٹ فارم سےڈاکٹر رشید امجد، پروفیسر جلیل عالی، سید سبط […]

Comments (0) Read more
بیکن، دجال،علامہ اقبال امام مہدی، حضرت ابراہیم علیہ السلام اور ایٹمی جہنم فلسفیاتی نظریات کا تقابلی مطالعہ September 7, 2015

علامہ محمد یوسف جبریل کا شمار بیسویں صدی کےان مسلم فلاسفہ میں ہوتا ہےجنہوں نےمادی ترقی ، بیکنی فلسفےاور فتنہ دجالیت کو موضوع بنایا۔ وہ مغربی فلاسفر فرانسس بیکن کےمادی نظریات کےسخت خلاف تھی۔ کیونکہ دین الہیٰ دنیاوی ترقی کےساتھ ساتھ فکر آخرت اور تزکیہ باطن کو بھی اپنےپیش نظر رکھتا ہے۔ دنیا بھر کےدانش […]

Comments (0) Read more
علامہ یوسف جبریل کی شاعری September 7, 2015

”نعرہ جبریل“ علامہ یوسف جبریل کا شعر ی مجموعہ ہے۔ ان کی شاعری میں الہامی کیفیت پائی جاتی ہےجس سےمستقبل کی نشان دہی اس انداز سےہوتی ہےکہ ان کی فکری پرواز کو پیشین گوئی کہنا بےجا نہ ہوگا۔ علامہ یوسف جبریل اگرچہ عمر کےاعتبار سےناتوانی کی منزل پر پہنچ چکےہیں مگر ان کےولولےاورجذبےجواں بیدار متحرک […]

Comments (1) Read more
علامہ یوسف جبریل کی تین طویل نظمیں September 7, 2015

جدید صنعتی شہر واہ کےقریب سےگذرتی ہوئی شاہراہ اعظم کےکنارےپرانی جوتیاں گانٹھنےوالےموچی کےپاس بان کی ٹوٹی ہوئی چارپائی پر اکثر و بیشتر ایک بابا بیٹھا نظر آتا ہی۔ سر پر پگڑی، پاوں میں ہوائی چپل دیہاتی طرز کا ڈھیلا ڈھالا لباس الجھی الجھی بکھری ہوئی زلفیں، اور غیر تراشیدہ بڑھی ہوئی داڑھی اس کی سفید […]

Comments (0) Read more
Naara Gabriel September 7, 2015

قلم کی عظمت کو تحفظ دینےکےلئےجذبہءخودداری اور فکری بلندی کا ہونا بہت ضروری شرط ہی۔ جس قلم کار کو یہ دعوی ہو کہ وہ اپنےافکار اور خیالات کی بدولت قلم کی عظمت کو اجاگر کر رہا ہےمگر اس میں وہ پاکیزگی اور ندرتِ بیان مفقود ہو وہ ولولہ اور جذبہ ناپید ہو وہ خودداری اور […]

Comments (0) Read more
نعرہءجبریل September 7, 2015

”نعرہ جبریل “جیسا کہ نام سےظاہر ہےایک لرزہ انداز نعرہ ہی۔ ایک للکار ہےسوزو گدازمیں ڈوبی ہوئی منظوم و موزوں بادل کی گرج بجلی کی کڑک شاعری برائےشاعری نہیں ایک نصیحت ہی۔ ایک پیغام ہےتنبیہی انداز میں صورِ اسرافیل کی پکار ہی۔ کلام ہےجو دل میں اُ تر کر ضمیر کو جھنجھوڑتا ہے۔اس تہذیبِ نو […]

Comments (1) Read more
”نغمہ جبریل آشوب “۔۔۔ایک مطالعہ September 7, 2015

الفقر فخری ، شہنشاہ ولایت، حضرت پیر سیدعبدالقادرجیلانی کی سرزمین عراق کے نزدیک عراق کےقرب و جوار میں ” مصیب“ کی مقدس فضاوں میں سانس لینےوالےنوجوان محمد یوسف کےوہم و گمان میں بھی نہیں ہو گا کہ مجھےایک دن دنیا بھر کےسامنےایٹمی ہتھیاروں کےخلاف سیسہ پلائی ہوئی دیوار بن کر کھڑا ہوناہی۔اسی محمدیوسف نےپچھلی ربع […]

Comments (2) Read more
”خوابِ جبریل“ پر ایک طائرانہ نظر September 7, 2015

علامہ محمد یوسف جبریل کا تازہ شعری مجموعہ ” خوابِ جبریل“ حال ہی میں منظر ِعام پر آیا ہےجس میںان کی طویل نظم ”گریہ ءنیم شبی“ خواب جبریل کےعنوان سے٤١ نظمیں ، لائحہ عمل (٢ منظومات) فرقان ( ایک نظم) معجزہ (٣نظمیں) نوید صبح (٢نظمیں) دعا ئیءنیمہ شب ، اسلامی معیشت ( ٤ نظمیں) گلہائےعقیدت […]

Comments (1) Read more
مختصر تبصرہ جات September 7, 2015

خانقاہ قادریہ صاحبزادہ مدثراحمدقادری سجادہ نشین دربار پیر مہدی احمدنگر غربی واہ کینٹ کےتاثرات اسلام علیکم ! نائب مشن حضرت علامہ محمد یوسف جبریل مجھےافسوس ہےکہ بیس سال سےحضرت خواجہ محمدصوفی رفیق قادری صاحب والیءجلالہ شریف ٹیکسلا سےملاقات رہی اور ساتھ ہی رہنےوالےحضرت علامہ جبریل کی زیارت نہ ہوسکی۔شایداس لئےکہ یہ اس طرح سےجاتا کہ […]

Comments (1) Read more
علامہ محمدیوسف جبریل حیات و خدمات September 7, 2015

علامہ محمد یوسف جبریل عصرِ حاضر کی نابغہ ءروزگار علمی اور ادبی شخصیت کےطور پر ابھری۔ آپ نےقومی اخبارات و جرائد میں ایٹمی جہنم سےبچاو کی تدابیر کےلئےسینکڑوں مضامین تحریر کئی۔ اردو کےمعروف محقق اور دانش ور ڈاکٹر تصدق حسین راجا نے”علامہ محمدیوسف جبریل حیات و خدمات“ میں ان کےسوانحی حالات مفصل مدون کر دیئےہیں […]

Comments (0) Read more
علامہ یوسف جبریل کی شاعری September 3, 2015

  علامہ یوسف جبریلؔ کی شاعری کا قطعاً مقصود شاعری نہیں بلکہ بھٹی سےاُ ٹھتےہوئےشعلوں سےلپکتی ہوئی چنگاریاں ہیں یا اندھیری رات میں متلاطم سمندر کی لہروں کی خوفناک صدائیں ہیں ۔ جوحال سےپیدا ہو کر مستقبل میں گُم ہوتی نظر آتی ہیں اور جس طرح قدرت کےہر عمل میں ایک تعین کا مظاہرہ ہوتا […]

Comments (0) Read more
گلبانگءصدارت کےفنی محاسن September 3, 2015

علامہ یوسف جبریل کی کتاب” نعرہ جبریل“ میں دوسری طویل نظم” گلبانگءصدارت“ ہی۔ زمانی ترتیب کےلحاظ سےیہ نظم ٠٧٩١ءکےالیکشن سےقبل لکھی گئی ۔ اس میں ایک آئیڈیل سربراہ ءمملکت کی تصویر کشی کی گئی ہے۔اور اس حوالےسےیہ علامہ یوسف جبریل کےسیاسی منشور بھی قرار پائی ہی۔ ملکی نظم ونسق چلانےکےلئےعلامہ صاحب خلافت کےنظام کی آرزو […]

Comments (0) Read more
Allama Yousaf Gabriel معروف فلسفی علامہ یوسف جبریل سے چند باتیں September 3, 2015

  Share  علامہ یوسف جبریل کےانٹرویو کےدوران مجھےمعلوم ہوا کہ موصوف نےایک ایسا علمی کارنامہ سرانجام دےرکھا ہی۔ جس کی مثال نہ تو ماضی کی علمی تاریخ میں ملتی ہی۔ اور نہ ہی اس موجودہ دور میں کوئی ایسی نظیر موجود ہی۔ موصوف نےمخلوق کو ایٹمی تباہی سےبچانےکےلئےنہایت ہی حوصلہ شکن حالات میں اور بغیر […]

Comments (0) Read more