Nazria Pakistan Aik Haqeeqat 24th July 2017 at Sangam Marriage Hall

Organized by :

Mureed e Iqbal Foundation  and  Yousaf Jibreel Foundation

24th July 2017

at Sangam Marriage Hall near Shareef Hospital Wah Cantt.

مریدِ اقبال فاؤنڈیشن (انٹرنیشنل) پاکستان اور یوسف جبریل فاؤنڈیشن، واہ کینٹ کے زیرِ انتظام 24جولائی 2017 ء بروز سوموار شام 7 بجے ’’نظریۂ پاکستان ایک زندہ حقیقت‘‘ کے عنوان سے سنگم میرج ھال، واہ کینٹ میں ایک پر وقار تقریب کا انعقاد کیا گیا۔ تقریب بلوچستان سے تشریف لائے ہوئے پاکستان اور نظریۂ پاکستان کے ایک نوجوان اور متحرک کارکن جناب راز محمد لونی کے اعزاز میں منعقد کی گئی۔
اِس شاندار تقریب کی صدارت وطنِ عزیز کے نامور ماہرِ اقبالیات ، ادیب اور کالم نگار جناب ڈاکٹر زاہد حسن چغتائی صاحب میگزین ایڈیٹر نوائے وقت اسلام آباد نے فرمائی۔ جبکہ مہمانِ خصوصی جناب سردار خالد ابراہیم خان ،  آزاد جموں کشمیر اسمبلی اور صدر جموں کشمیر پیپلز پارٹی تھے۔ مہمانانِ اعزاز میں جناب طارق منیر بٹ صاحب، سینئر نائب صدر جمیعت علمائے پاکستان صوبہ پنجاب اور جناب ڈاکٹر ضیاء الرحمٰن نورانی ، مرکزی سینئر نائب صدر انجمن طلبائے اسلام پاکستان شامل تھے۔ اِس تقریب کے انعقاد کا مقصد نسلِ نو کو نظریۂ پاکستان کی اہمیت سے روشناس کانا اور آج کل وطنِ عزیز کی نظریاتی سرحدوں کو لاحق خطرات سے آگاہ کرنا تھاکیونکہ دونوں منتظمین مریدِ اقبال فاؤنڈیشن (انٹرنیشنل) پاکستان اور یوسف جبریل فاؤنڈیشن، واہ کینٹ کا نصب العین بانیانِ پاکستان کے افکار کی ترویج اور نظریۂ پاکستان کا تحفظ ہے۔ پروگرام میں حسن ابدال، ٹیکسلا اور واہ کینٹ سے نامی گرامی شعرائے کرام، علمی و ادبی شخصیات ، ماہرینِ تعلیم ، طلباء اور سیاسی اور سماجی شخصیات نے شرکت کی۔
وسیم احمد  میزبانِ مجلس تھے۔ تلاوتِ کلامِ مجید وقار احمد اعوان نے کی۔ مریدِ اقبال علامہ غلام فریدؔ نقشبندی کا نعتیہ کلام ’’ہوتا نہ تُو تو کچھ نہ تھ ذوقِ جہانِ رنگ و بُو‘‘ معروف نعت خوان جناب محمد حذیفہ نقشبندی نے پیش کیا۔ یوسف جبریل فاؤنڈیشن کے سیکرٹری جنرل جناب رضوان یوسف نے خطبۂ استقبالیہ دیتے ہوئے علامہ یوسف جبریلؒ اور مریدِ اقبال علامہ غلام فریدؔ نقشبندی کی شخصیات اور خدمات پر مفصل روشی ڈالی اور مذکورہ دونوں شخصیات کی پاکستان اور نظریۂ پاکستان سے روحانی وابستگی کو بیان کیا۔ مہمانِ اعزاز جناب طارق منیر بٹ صاحب، سینئر نائب صدر جمیعت علمائے پاکستان صوبہ پنجاب نے خطاب کرتے ہوئے تحریکِ آزادی میں علمائے کرام کے کردار کو موضوعِ سخن بنایا۔
صاحبِ شام جناب راز محمد لونی نے نہایت پرجوش انداز میں پاکستان اور نظریۂ پاکستان کا دفاع کیا اور گزشتہ دنوں بلوچستان میں ہونے والی پاکستان مخالف سرگرمیوں اور بانیٔ پاکستان قائدِ اعظم محمد علی جناحؒ کی بلوچستان میں رہائش گاہ ’’زیارت زیذیڈنسی‘‘میں آتش زنی جیسے واقعات کی حقیقت بیان کی اوراِس عزم کا اظہار کیا کہ ہم پہلے پاکستانی ہیں اورسندھی، بلوچی ، پٹھان اور پنجابی بعد میں ۔
مہمانِ خصوصی جناب سردار خالد ابراہیم خان ،  آزاد جموں کشمیر اسمبلی اور صدر جموں کشمیر پیپلز پارٹی نے نظریۂ پاکستان اور بانیانِ پاکستان سے متعلق کئے جانے والے منفی پروپیگنڈے کا ردکرتے ہوئے کئی نادر تاریخی حقائق سے پردہ اُٹھایا۔ اُن کے بعد صدرِ مجلس نامور ماہرِ اقبالیات ، ادیب اور کالم نگار جناب ڈاکٹر زاہد حسن چغتائی صاحب میگزین ایڈیٹر نوائے وقت اسلام آبادتقریب سے خطاب کرنے سٹیج پر تشریف لائے۔ ڈاکٹر صاحب نے نہایت متاثر کن انداز میں مصورِ پاکستان علامہ محمد اقبالؒ اور نظریۂ پاکستان کے موضوع پر سیر حاصل گفتگو کی۔ آپ نے پاکستان کو لاحق اندرونی و بیرونی خطرات سے نجات اور پاکستان کے تمام موجودہ مسائل کے حل کے لیے فکرِ اقبالؒ کو اپنانے پر زور دیا۔
صدر مریدِ اقبال فاؤنڈیشن (انٹرنیشنل) پاکستان جناب پروفیسر ایس ایم قاسمی نے تمام مہمانانِ گرامی کا شکریہ ادا کیااو ر کہا کہ دراصل نظریۂ پاکستان ہی نظریۂ اسلام ہے۔ اُنہوں نے صاحبِ شام جناب راز محمد لونی کر دورانِ خطاب سٹیج پر بلا کر اُن سے اظہارِ یک جہتی کیا اورحقیقی پاکستانیت اورترویجِ فکرِ اقبالؒکی خاطر ہر طرح کے تعاون کی یقین دہانی کرائی ۔ آخر میں رضوان حفیظ بٹ صاحب نے ملی نغمہ ’’یہ وطن تمہارا ہے تم ہو پاسباں اِس کے‘‘ پیش کیا۔

Print Friendly, PDF & Email

Related Posts

  • 64
    Back to Kuliyat e Gabriel تبصرہ جات و تاثرات علامہ یوسف جبریل کی شاعری کے متعلق محترم ڈاکٹر جاوید اقبال مرحوم کے خیالات ’’انداز فکر حضرت علامہ اقبالؒ کا سا ہے اور ایک لحاظ سے کلام انہی کی آواز کی صدائے بازگشت ہے۔ شاعر نے جس نصب العین کو پیش…
  • 59
    Back to Kuliyat e Gabriel پیشِ لفظ شاعری قطعاً مقصود نہیں بلکہ بھٹی سے اُ ٹھتے ہوئے شعلوں سے لپکتی ہوئی چنگاریاں ہیں یا اندھیری رات میں متلاطم سمندر کی لہروں کی خوفناک صدائیں ہیں جوحال سے پیدا ہو کر مستقبل میں گُم ہوتی نظر آتی ہیں اور جس طرح…
  • 58
    غلط خاکے اور ٹرک کی بتی کے پیچھے لگا دینے والی تفتیش :زینب اور اس جیسی 11 کمسن بچیوں کے ساتھ زیادتی اور انکے قتل کے پیچھے چھپے خوفناک و شرمناک حقائق اس رپورٹ میں ملاحظہ کیجیے لاہور(ویب ڈیسک) زینب قتل کیس کہنے کو اغوا کے بعد زیادتی اور زیادتی…
  • 56
    مختصر تعارف علامہ محمد یوسف جبریل 17فروری 1917ءکو وادی سون سکیسر ضلع خوشاب میں ملک محمد خان کےگھر پیدا ہوئی۔ یہ وہی تاریخ بنتی ہےجس تاریخ کو بائیبل کےمطابق طوفان نوح آیاتھا ۔اس دور کو بھی ایک طوفان دیکھنا تھا مگر مختلف قسم کا ۔ طوفان نوح آبی تھا مگر…
  • 54
    کیا پاکستانی ادب لمحہءموجود کی ضرورت ہے؟ تحریر محمدعارف ادب جغرافیائی حدود و قیود کا نام نہیں، بلکہ یہ ملکی سرحدوں کو عبور کرکےخطےکےجذبوں کو زبان عطا کرتا ہی۔ ادب پاکستانی نہیں ، ادب ایرانی نہیں، افغانی نہیں، انسانی ہوتا ہی۔ ہر ملک کی نظریاتی، جغرافیائی سرحدوں کو تحریروں میں…
  • 54
    [ad name="468x60"] (۱) علامہ محمد یوسف جبریلؒ ملک کی مشہور و معروف علمی وروحانی شخصیت ہیں اور واہ کینٹ میں کسی تعارف کی محتاج نہیں ہیں۔اُنکا ورثہ اُمتِ مسلمہ کیلئے ایک مشعلِ راہ کی حیشیت رکھتا ہے۔اُنکے اُفکاروپیغام کو اُجاگر کرنے اور آسان وفہم انداز میں عوام الناس تک پہنچانے…
  • 54
    Back to Kuliyat e Gabriel شعلہء گردوں یعنی شہیدوں کے چراغ وہ خوں کا قطرہ زمانے میں بہایا جو گیا ہو شاہراہ سے خار اٹھانے میں صبا رفتار گھوڑوں کی صفیں انبار تیغوں کے ذخیروں کے ذخیرے جا بجا خونخوار تیغوں کے سائے میں وہ خوں کا قطرہ زمانے میں…
  • 54
    بابا جی یحییٰ خان سےایک ملاقات تحریر : محمد عارف یہ جون کی ایک کڑکتی ہوئی دوپہر تھی کہ جب میرےمحترم دوست شوکت محمود اعوان (واہ کینٹ) نےمجھےبتایا کہ میرےایک دوست (سعید صاحب ) ٹریول لاج ، ٥ سڑکی پٹرول پمپ ، سکالر کالج ، پی سی ہوٹل کےنزدیک صدر…
  • 54
    رات اور دن ٭٭٭ڈاکٹر اظہر وحید٭٭٭ رات اور دن کا آپس میں بدلنا تغیر کی علامت ہے.... لیکن ثبات کے متلاشی کیلیے اس میں ثبات نہیں۔ تغیر کو شاعری میں ثبات مل بھی جائے‘ تو انسان کو تغیر میں ثبات نہیں ملتا۔ رات چاند سے عبارت ہے اور دن سورج…
  • 53
    Back to Kuliyat e Gabriel ضربِ مومن رباعی ادا مست مئے توحید کی ہر عاشقانہ ہے ادا مست مئے توحید کی ہر عاشقانہ ہے زمین پر ہے وجود اس کا فلک پر آشیانہ ہے جمالِ یار کا پرتوَ جنوں کو تازیانہ ہے ٹھکانا اس کا جنت ہے یہ دنیا قید…
  • 52
    عصرِ حاضر وہ اشکِ خونِ گرہ گیر مشکبو نہ رہا وہ اشکِ خونِ گرہ گیر مشکبو نہ رہا قتیلِ عشق کے باطن کی آرزو نہ رہا رگوں میں جوش حمیت کی آبرو نہ رہی دلوں میں جوشِ اخوت وہ کو بہ کو نہ رہا تڑپتے دل کی پکاروں کی بے…
  • 52
    Back to Kuliyat e Gabriel نعرہ ء جبریل ( 1) روحِ اقبالؒ ہوں میں حیرتِ جبریل بھی ہوں برقِ خاطف کی تجلی میں ابابیل بھی ہوں ریگِ بطحا میں نہاں شعلہء قندیل بھی ہوں فتنہءِ دورِ یہودی کے لئے نیل بھی ہوں خاک ہوں پائے غلامانِِ محمد ﷺ کی یہ…
  • 51
    محمد عارف کےحالات زندگی تحریر شوکت محمود اعوان واہ کینٹ نام محمدعارف ولدیت میاں محمد سال پیدائش 16 فروری 1969 مستقل پتہ گاو¿ں پنڈ فضل خان، تحصیل فتح جنگ، ضلع اٹک موجودہ پتہ I-R-36 ، نزد جنجوعہ ٹریڈرز، اعوان مارکیٹ فیصل شہید ٹیکسلا نمبر رابطہ 03335465984 تعلیمی کوائف:۔ ١۔ پرائمری…
  • 51
    اپنی موج میں ،اپنی دُھن میں ،بہتا بولتا رہتا ہے تحریر : شمشیر حیدر جب ہر طرف اندھیرا ہی اندھیرا ہوتو ایسےمیںاگر ایک جگنو بھی چمکتا دکھائی دےتو حوصلہ ہونےلگتا ہے،کچھ کچھ اپنےہونےکےنشاں کھلنےلگتےہیں اور وحشتوں کےفریب میں کمی آنےلگتی ہے۔ہم ایسےعہدِبےچراغ میں زندہ ہیںکہ جب ہرآدمی زندگی جبرِمسلسل کی طرح…
  • 51
    علامہ محمد یوسف جبریل ایک جائزہ تحریر محمد عارف علامہ یوسف جبریل کی زندگی پر بہت کچھ لکھاجاسکتا ہی۔ وہ سال ہاسال سےمسلمانان عالم کو بیدار کرنےمیں مصروف عمل رہی۔ وہ قرانی تعلیمات کی روشنی میں دنیاکو امن اور سلامتی کا پیغام دیتےرہےہیں۔ علامہ یوسف جبریل کی شخصیت نہایت عجیب…
  • 51
    تبدیلی کے خواہاں نومنتخب حکمرانوں کیلئے تجاویزِ چند!! ( ڈاکٹر اظہر وحید ) وطنِ عزیز میں جب بھی کوئی حکومت بدلتی ہے اہلِ وطن نئے سرے سے سے نئی اُمیدیں باندھ لیتے ہیں....اِس خیال سے کہ حکومت کے بدلنے سے شائد اُن کی حالت بھی بدل جائے۔ صد شکر! یہ…
  • 51
    بسم اللہ الرحمن الرحیم اللھم صلی علی محمد و علی آلہ و اصحابہ و اھل بیتہ و ازواجہ و ذریتہ اجمعین برحمتک یا الرحم الرحمین o توحید اور تولید قرآن و سنت کی روشنی میں (ایک تقابلی جائزہ ) پیش لفظ ان صفحات میں ایک حقیر اور ادنیٰ سی کوشش…
  • 51
    Back to Kuliyat e Gabriel لائحہ عمل اب بھنور میں جو سفینہ ہے اب بھنور میں جو سفینہ ہے ذرا ہوش کریں کچھ کریں خوفِ خدا بہرِ خدا ہوش کریں ڈوب سکتی ہے گھٹا ٹوپ اندھیروں میں یہ ناؤ ملت اپنی ہے گرفتارِ بلا ہوش کریں لگ تو سکتی تھی…
  • 50
    Back to Kuliyat e Gabriel گلہائے عقیدت علامہ اقبال ؒ مرحوم کے حضور میں سرود رفتہ باز آید بیاید نسیمے از جحاز آید بیاید دو صد رحمت بجان آں فقیرے دگر دانائے راز آید بیاید دگر آید ہماں دانائے رازے ندارد جز نوائے دل گدازے دے صد چاک و چشمے…
  • 50
    ہر انسان کو اللہ تعالی نےکوئی نہ کو ئی خوبی عطا کی ہوتی ہےاور یہ کہ ہر انسان میں بہت سی پوشیدہ صلاحیتیں ہوتی ہیں ۔لیکن اگر بہت سی صلاحتیں اور خوبیاں ایک انسان میں یکجاہوجائیں تو یہ کمال حیرانی کی بات ہوتی ہےاگر انسان اپنےاندر پائی جانےوالی ان ایک…

Share Your Thoughts

Make A comment

Subscribe By Email for Updates.
Copied!