چراغ وقت نوع انسانی کے موجودہ تصورات کو بدلنے کا ایک جامعہ پروگرام اور ایک انقلابی فکر ہے۔ تحریر جنرل حمید گل

050

hameedgul

عنایت اللہ صاحب کی تازہ تصنیف (چراغ وقت) پر میرا اظہار خیال ایسا ہی ہے ۔ کہ جیسے سورج کو چراغ دکھانا۔ کہنے کو تو یہ وقت کے عنوان سے ان کی تقریبا نصف درجن کتابوں کا تسلسل ہے۔ لیکن در حقیقت یہ نوع انسانی کے موجودہ تصورات کو بدلنے کا ایک جامعہ پروگرام اورانقلابی فکر کو بیدار کرنے کاہدایت نامہ بھی ہے۔ عنایت اللہ صاحب نے مادیت کے غلبہ کی فضاء میں ، روحانی ارتقاء کا راستہ منتخب کرکے بڑی جرائت کا مظاہرہ کیا ہے۔ بلکہ فقر، ایثار، قربانی اور سرفروشی کے افکار ان کو اپنے عظیم مرشد واصف علی واصف سے ورثہ میں ملے ہیں۔
میں جانتا ہوں کہ ان کی ذاتی زندگی ، بودوباش، تکلم اور تحریر میں وہ ہر اعتبار سے اپنے افکار کا عملی نمونہ ہیں۔ میری نظر میں ان کی شخصیت کا سب سے نمایاں پہلو ،ان کی خوش بینی اور بے پناہ عزم، مایوسی کے پھیلے ہوئے سایوں کے درمیان، ان کا عزم و استقلال یقینا ان کی اندرونی روشنی کا مظہر ہے۔
انہیں یقین ہے کہ اللہ تعالیٰ کے فضل و کرم سے حالات میں یک دم تبدیلی رونما ہو گی۔ اور اس وقت راہنمائی کے لئے چراغ منزل کی ضرورت ناگزیر ہو جائے گی۔ عنایت اللہ صاحب اسی جذبہ کے تحت چراغ پہ چراغ روشن کئے جا رہے ہیں۔ میں ان کے افکار کی اڑان تک پہنچنے کی صلاحیت تو نہیں رکھتا۔ لیکن ان کی تحسین ضرور کر سکتا ہوں۔ میرے لئے مصنف اور ان کی تخلیق دونوں ہی مقدس ہیں۔ میں انہیں دورحاضر کا بیش قیمت سرمایہ سمجھوں تو یہ مبالغہ نہیں ہو گا۔
جنرل حمید گل (ریٹائرڈ) ۲عسکری ولاز، چکلالہ سکیم نمبر۱۱۱ راولپنڈی۔

 


Print Friendly

Download Attachments

Related Posts

  • 52
    عالمِ اسلام کے لئے جمہوریت ایکاہم مسئلہ ہے۔ جسے کبھی لطافت اور کبھی دل کی کسک کے ساتھ سو چا گیا ۔ اور کبھی جمہوریت کو بانسری کا الم نامہ بنا کر پیش کیا گیا اوریوں جمہوریت مسلمانوں کے لئے حقیقت، عرفان ، روحانی رموز و حقیقت کاروپ دھا ر…
  • 43
      انسانی ارتقاء تبدیلی کے بغیر ممکن نہیں۔ تبدیلی ماحول کی ہو، نظریات کی ہو یا خیالات کی، اس سے کئی مسائل جنم لیتے ہیں۔ بنیادی مشکل انسان کو ہر لحظہ درپیش رہتی ہے۔ وہ چاہے تبدیلی کاخیر مقدم کرے۔ یااسے کلی طور پر رد کر دے۔ ہر مقام پراسے…
  • 43
            To View/Download PDF in better font go to end of this post. ہم ہیں مسلم، ہے سارا جہاں ہمارا خودی کی زد میں ہے ساری خدائی خلق لکم ما فی الارض جمیعا (سورۃ البقرہ) ’’ ساری کائنات ہم نے آپ لوگوں کے لئے تخلیق فرمائی ہے…

Share Your Thoughts

Make A comment

Leave a Reply