اجڑ سکےگی کسی سےنہ خانقاہ مری تحریر محمدعارف

اجڑ سکےگی کسی سےنہ خانقاہ مری
تحریر : محمدعارف ٹیکسلا
راولپنڈی سےپشاور کی طرف آئیں تو پتھروں کےشہر ٹیکسلا سےچند قدم آگےایک چھوٹی سی مضافاتی بستی نواب آباد ہےجو صنعتی شہر واہ کینٹ کا ایک جزو لاینفک ہوتےہوئےبھی دیہات کی دلفریب فضا کا دلنشین رنگ لئےہوئےہے۔اس بستی کی آبادی بھی کافی بڑھ گئی ہی۔ دوردور تک پھیلےہوئےلہلہاتےکھیتوں کےحسین نظارےاپنی طرف متوجہ کرتےہیں۔ رات کو گہرےدبیز اندھیرےکی چادر فضا پر تن جاتی ہےجس سےپراسراریت کا احساس ہوتا ہی۔ اسی مضافات کی وجہ شہرت ایک اہم علمی و روحانی شخصیت علامہ محمد یوسف جبریل ہیں۔ علامہ محمد یوسف جبریلمذاہب عالم، فلسفہ، علم کلام، سائنس، شاعری، معاشیات، اقبالیات، اور قرآنیات کےزبردست عالم تھی۔ انہوں نےمختلف النوع علوم پر شہرہ آفاق کتب تحریر کی ہیں ،جن کی تعداد تقریباََ چالیس کےقریب بنتی ہی۔ ان کا بڑا موضوع سورة الھمزہ کی تشریح و توضیح ہی۔ وہ جدید سائنسی عہد کو ایٹمی تباہی سےبچا نا چاہتےہیں۔ وہ اسلحےاور میزائلیوں کی دوڑ کو ختم کرکےپر امن بقائےباہمی کا نعرہ مستانہ بلند کرنےکےخواہاں رہی۔ علامہ محمد یوسف جبریل ایک محب وطن پاکستانی بھی تھی۔ وہ عمر بھر پاکستان کی نظریاتی و جغرافیائی سرحدوں کی حفاظت پر کمربستہ رہی۔ ان کےمضامین اور تحریروں سےایک سچااور کھرا پاکستانی نظر آتاہی۔ وہ دوقومی نظریئےکےزبردست حامی تھے۔ ان کی ملی شاعری فکر اقبال کاتسلسل ہی۔ ان کےشعری مجموعے”نغمہءجبریل آشوب“، خواب جبریل، سوز جبریل ،نالہ جبریل“ کےعنوان سےچھپ چکےہیں۔ جب کہ فارسی مجموعہ کلام ”راز خلیل“ زیرِ اشاعت ہے۔قرآن حکیم کی الہامی حیثیت پر مس اینی مری شمل جرمن مستشرق سکالر سےانکا مکالمہ خاصےکی چیز ہی۔ اسلام کےمعاشی نظام جدید و قدیم اٹامزم فلسفہ تخلیق کائنات جیسےموضوعات پر ان کا علمی کام اہمیت کا حامل ہی۔علامہ محمد یوسف جبریل ملک آباد کی تنگ و تاریک اور پرپیچ گلیوں میں واقعی ایک چھوٹےسےگھر میں بیٹھ کر اس قدر متنوع الجہات علمی کارنامہ انجام دےگئےہیں جسےرہتی دنیاتک یاد رکھا جائےگا۔ علامہ محمد یوسف جبریل خود تو اسی بستی میں آسودہ خاک ہو گئےہیں مگر ان کی تحریریں قریہ قریہ ان کی موجودگی کا احساس دلاتی ہیں، مترجم، محقق اور دانش ور ڈاکٹر تصدق حسین نی” علامہ محمد یوسف جبریل، حیات و خدمات“ کےعنوان سےایک کتاب تحریر کی ہےجو ان کی شخصیت اور علم کےمختلف گوشوں کو سامنےلاتی ہی۔ ڈاکٹر تصدق حسین،ذاکر نائیک، ہارون یحیٰ کی کتب کےتراجم کی وجہ سےمشہور ہیں۔ علامہ محمدیوسف جبریل تحریک تحفظ و استحکام پاکستان کےذریعےاسلامی جمہوریہءپاکستان کےداخلی استحکام اور نطریاتی تشخص کےلئےسرگرم عمل رہی۔ انہوں نے1970 ءکےالیکشن سےقبل ”چڑیا گھر کا الیکشن “کےنام سےایک خوبصورت مزاحیہ کتاب لکھی۔ یہ کتاب قسطوں میںندائےملت کےاخبار میں شائع ہوئی ۔اس کتاب کو علامہ صاحب کےبیٹےشوکت محمود اعوان نےاب کتابی شکل میں شائع کیا ہی۔ واضح ہو کہ شوکت اعوان ادارہ افکار جبریل اور ادارہ تحقیق الاعوان پاکستان کےمرکزی جنرل سیکرٹری ہیں۔ اور اپنےوالد گرامی کےعلمی مشن کو بھی آگےبڑھا رہےہیں۔ علامہ محمدیوسف جبریل کی طویل نظمیں ”گلبانگ صدارت اور نقارہ“ اس سلسلےکی کڑی ہیں۔ بابا جی عنایت اللہ صاحب ایک ایسےمرد درویش ہیں جو اس وقت مکتبہ واصفیہ کےواحد ترجمان ہیںجنہوں نےآئینہ وقت، صدائےوقت، نادوقت، ندائےوقت، انقلاب وقت، چراغ وقت، اور اب بلائےوقت وغیرہ شائع کرکےعلامہ محمد یوسف جبریل کی اس علمی وفکری تحریک کو پروان چڑھایا ہی۔ پاکستانی اہل قلم سےدرخواست ہےکہ وہ علامہ محمد یوسف جبریل کےعلمی مشن کےفروغ کےلئےسرگرم عمل ہو جائیں تاکہ طوفانوں میںگھری ہوئی کشتی کو کنارےپرلگایا جا سکی۔علامہ محمد یوسف جبریل ایک حکیم، فلسفی، سائنس دان ہی نہیں بلکہ مقربین اللہ میں سےہیں۔ واہ اور گردونواح میں سخی زندہ پیر بابا ولی قندھاری، علامہ محمد یوسف جبریل، بابا یوسف سرکار ٹیکسلا، بابا بورےشاہ کی موجودگی سےاس علاقہ کی عوام فیوض و برکات سمیٹ رہی ہیں۔ علامہ محمد یوسف جبریل کو پچیس برس کی عمر میں سیدعبدالقادر جیلانی کےدربار گہر بار سےبراہ راست فیض حاصل ہوا۔ اور یہیں سےانہیں ابراہمی مشن عطا ہوا۔ جسےانہوں نےربع صدی تک بخوبی نبھایا۔ ان کےمزار پر دور دور سےلوگ آتےہیں۔
فقیر خاک نشیں اوراس کی جنبشیں پھر اس کےبعد ہوئی سلطنت تباہ میری
حروف کشف کےہیں اور طروف مٹی کے اجڑ سکےگی کسی سےنہ خانقاہ میری

 

Print Friendly, PDF & Email

Attachments

Related Posts

  • 84
    علامہ محمدیوسف جبریل لمحہءموجود کےدانش ور فلسفی تحریر محمد عارف ٹیکسلا علامہ محمد یوسف جبریل لمحہ موجود کےبالغ نظر دانشور ، فلسفی، دانائےملت، شاعر اور ادیب تھی۔ آپ نےاپنےرشحاتِ قلم کےذریعے نصف صدی تک امت مسلمہ کےحساس طبقےکو علم و دانش کی روشنی سےمنور کیا۔آپ نےمسلم مفکراور ایٹمی سائنس دان…
  • 83
    مختصر تعارف علامہ محمد یوسف جبریل 17فروری 1917ءکو وادی سون سکیسر ضلع خوشاب میں ملک محمد خان کےگھر پیدا ہوئی۔ یہ وہی تاریخ بنتی ہےجس تاریخ کو بائیبل کےمطابق طوفان نوح آیاتھا ۔اس دور کو بھی ایک طوفان دیکھنا تھا مگر مختلف قسم کا ۔ طوفان نوح آبی تھا مگر…
  • 82
    وقاص شریف ، تلاشِ حقیقت کا شاعر تحریر : محمد عار ف (ٹیکسلا) طالب قریشی، جوگی جہلمی اور تنویر سپرا کی سرزمین وادی جہلم کےدامن میں کھاریاں واقع ہی۔ جہاں کےعلمی و ادبی منظر نامےمیں ایک نئےشاعر وقاص شریف کا ظہور ہواہے۔ وقاص شریف کا شعری مجموعہ ” سازِ دل“…
  • 80
    علامہ محمد یوسف جبریل ایک جائزہ تحریر محمد عارف علامہ یوسف جبریل کی زندگی پر بہت کچھ لکھاجاسکتا ہی۔ وہ سال ہاسال سےمسلمانان عالم کو بیدار کرنےمیں مصروف عمل رہی۔ وہ قرانی تعلیمات کی روشنی میں دنیاکو امن اور سلامتی کا پیغام دیتےرہےہیں۔ علامہ یوسف جبریل کی شخصیت نہایت عجیب…
  • 79
    ”چراغِ راہ“ تحریر : محمد عارف ٹیکسلا واصف علی واصف نےایک دفعہ کہا تھا کہ ” ہم زندگی بھر زندہ رہنےکےفارمولےسیکھتےرہتےہیں اور زندگی جب اندر سےختم ہو جاتی ہےتو ہم بےبس ہو جاتےہیں۔ کیونکہ ہم نےموت کا فارمولا سیکھا ہی نہیں ہوتا۔ اسلا م نےبامقصد زندگی کےساتھ بامقصد موت کا…
  • 79
    بسم اللہ الرحمن الرحیم اللھم صلی علی محمد و علی آلہ و اصحابہ و اھل بیتہ و ازواجہ و ذریتہ اجمعین برحمتک یا الرحم الرحمین o توحید اور تولید قرآن و سنت کی روشنی میں (ایک تقابلی جائزہ ) پیش لفظ ان صفحات میں ایک حقیر اور ادنیٰ سی کوشش…
  • 77
    وادی سون سکیسر کی ایک عظیم ادبی شخصیت ۔ ملک خدابخش مسافر تحریر : ملک شوکت محمود اعوان وادی سون سکیسرنےبےشمار ادیب، شاعر، عالم، فاضل، مفسر، مقرر، دیندار،سائنس دان، فلسفی، ولی اللہ،مجاہد،فوجی افسر اور فوجی جوان، ٹیچر، زاہد، عابد اور علمائےکرام کو جنم دیا ہی، ان میں ہم جس شخصیت…
  • 75
    Introduction of shaukat m awan gen. secretary adara tehqiqul awan pakistan President Yousuf Jibreel Foundation sarparast ala bazme afqare gabriel wah cantt editor coordinator weekly watan islamabad شوکت اعوان شخصیت اور خدمات تحریر محمد عارف ١۔ شوکت محمود اعوان گیارہ نومبر انیس سو ترپن 11-11-1953میں بمقام کھبیکی وادی سون سکیسر…
  • 75
    ماہنامہ” شعوب“ پر ایک اچٹتی ہوئی نظر تحریر : محمد عارف محبت حسین اعوان ، اعوان قبیلےکےایک عظیم سپوت ہیں، جنہوں نے”شعوب“ کےنام سےایک ادبی پرچےکا اجرا کیا ۔ جس کا دوسرا شمارہ فروری 2015 میں چھپ کر ا یا ہے۔ زیرِ نظر پرچہ” شعوب“ اپنےحسنِ اسلوب اور جامع و…
  • 74
    علامہ محمد یوسف جبریل اور علامہ محمداقبال۔ چند فکری مباحث تحریر محمدعارف علامہ محمد یوسف جبریل شعرا میں شمار نہیں ہوتےاور نہ ہی درحقیقت ان کا میدان شاعری ہےمگر اس امر سےانکار نہیں کیا جا سکتا کہ وہ علامہ محمد اقبال کی فکر تازہ اور اسلوب فن سےگہری مماثلت رکھتےہیں۔…
  • 73
    ایک نابغہء روزگار روحانی شخصیت حضرت علامہ محمد یوسف جبریل تحریر : محمدعارف پروفیسر سید اللطائفہ حضرت جنید بغدادی کو فقر کا منصب اس لئےعطا ہوا کہ انہوں نےاہلِ بیت کی تعظیم کی۔ فقراءاور اہل اللہ نےاپنی تعلیمات کو ساد ہ و آسان اسلوب میں ڈھال کر ہمیشہ پیش کیا…
  • 72
    محمد عارف کےحالات زندگی تحریر شوکت محمود اعوان واہ کینٹ نام محمدعارف ولدیت میاں محمد سال پیدائش 16 فروری 1969 مستقل پتہ گاو¿ں پنڈ فضل خان، تحصیل فتح جنگ، ضلع اٹک موجودہ پتہ I-R-36 ، نزد جنجوعہ ٹریڈرز، اعوان مارکیٹ فیصل شہید ٹیکسلا نمبر رابطہ 03335465984 تعلیمی کوائف:۔ ١۔ پرائمری…
  • 71
    واہ قدیم شہر ٹیکسلا کےسنگم پر واقع ہی۔ ازمنہءقدیم میں ٹیکسلا گندھارا تہذیب کی راجدھانی رہا ہی۔ دور دراز سےتجارتی قافلےآتی، یہاں پر پڑاوکرتےاور اہل ہنر و صاحبان سیف و قلیم کا بھی یہاں پر اجتماع رہتا۔ ایک زمانےمیں علم و ہنر کےحوالےسےٹیکسلا کا پورےعالم میں ڈنکا بجتا تھا اور…
  • 70
    حطمہ کی اہمیت پر نقاط تحریر شوکت محمود اعوان 1962 ءمیں علامہ محمد یوسف جبریل کو قرآن حکیم میں حطمہ( ایٹمی سائنس اور قران حکیم )کےبارےمیں انکشاف ہوا ۔ حطمہ کےبارےمیں آقا نبی کریم اور صحابہ کرام کےارشادات موجود ہیں۔ بعد میں مفسرین کرام نےاس پر خصوصی تحقیق کی اور…
  • 69
    خدا بانٹ لیا ہے تحریر : محمد عارف (ٹیکسلا) آجکل تھوک کےحساب سےچھپنےوالےشعری مجموعوں میں سےشاید ہی کوئی دل کو بھا جائےاور جذبات میں ہلچل بپا کرنےکا سبب ہو ۔کاشف بٹ کا شعری مجموعہ ”خدا بانٹ لیا ہی“ بھی انہی میں سےایک ہی۔ کاشف بٹ کی شاعری پڑھتےہوئےملائمت، نرمی اور شگفتگی…
  • 68
    ”متاعِ فقیر“۔ تعارف و تجزیہ تحریر: محمد عارف ڈاکٹرتصدق حسین آبائی گاو¿ں بادشاہ پور ضلع چکوال سےتعلق رکھتےہیں۔ ایم اےانگریزی، ایم اےاردو کرنےکےبعدانہوں نےاردو میں ڈاکٹریٹ کی ڈگری حاصل کی۔ 1985ءمیں ڈاکٹریٹ کا تحقیقی مقالہ نسیم حجازی اور ان کی ناول نگاری پر لکھا۔ 1960 ءسے1984 ءتک درس و تدریس…
  • 68
    ”ادب دےنگینے“ تحریر: محمد عارف (ٹیکسلا) میاں محمد اعظم کا تعلق راولپنڈی سےہےجسےشاعروں اور افسانہ نگاروں کا شہر کہا جاتا ہی۔ میاں محمد اعظم نے”ادب دےنگینی“ کےعنوان سےحال ہی میں ایک خوبصورت شعری مجموعہ زیورِ اشاعت سےآراستہ کیا ہی، جس کا انتساب” پروفیسر زہیر کنجاہی صاحب “کےنام ہےجو راولپنڈی کےمعروف…
  • 68
    ”ناد وقت سنانےوالاملنگ “بابا جی عنایت اللہ تحریر :داکٹر رشید نثار ہمارےعہد میں روحِ عصر کےنمائندہ واصف علی واصف تھی۔ ان کی دانش کےروشن چراغ بابا جی عنایت اللہ ہیں۔ جن کےپاس علم، دانش اور vision تینوں موجود ہیں۔راقم التحریر جناب واصف علی واصف کو اس عہدکاکشادہ ظرف انسان اور…
  • 68
    وادی سون کاتعارف تحریر : شوکت محموداعوان پاکستان کی حسین و جمیل وادیوں میں وادی سون دلفریب مناظر کی حامل ایک مشہور وادی ہی۔ یہ وادی کوہستان نمک کےعلاقےکا حصہ ہےاور اپنےقدرتی مناظر ، خوش گوار ماحول، ٹھنڈےموسم اور زمین میں معدنیات کےبھر پور خزانوں سےمزین مشہور وادی ہی۔ اس…
  • 68
    حج دا سفر نامہ تحریر: محمدعارف (ٹیکسلا) ڈاکٹر سید عبداللہ ”سرزمینِ حافظ و خیام از مقبول بیگ بدخشانی “ میں رقم طراز ہیں کہ ” ایک کامیاب سفر نامہ وہ ہوتا ہےجو صرف ساکت و جامد فطرت کا عکاس نہ ہو بلکہ لمحہءرواں میں آنکھ، کان ، زبان اوراحساس سےٹکرانےوالی…

Share Your Thoughts

Make A comment

Leave a Reply

Subscribe By Email for Updates.