Piyas may kitni manzlain hoti hain.

🌾
😭😭معراجِ عطش 😭😭
(پیاس کی انتہائی حد)

رمضان میں بھوک پیاس کے خوف سے روزے نہیں رکھنے والوں کے لئے عبرت والا واقعہ
👇
زندان کے اندھیروں میں کئی دن اور رات گزر جانے کے بعد ایک دن امام حسین علیہ السلام کی لاڈلی بیٹی جناب سکینہ سلام اللہ علیہا نے اپنے بھائی امام زین العابدین علیہ السلام کے پاس جا کر ایک سوال کیا
بھیا سجاد، آپ امام وقت ہیں اور امام وقت ہر علم سے آراستہ ہوتا ہے میں آپ سے ایک سوال کرتی ہوں آپ مجھے بتائیں ”
پیاس میں کتنی منزل ہوتی ہیں؟

جناب سکینہ کا یہ سوال سن کر جناب زینب سلام اللہ علیہا تڑپ گئیں. آگے بڑھ کر سکینہ کو گود میں اٹھایا، پیار کیا اور کہا کہ میری بچی تو ایسا کیوں پوچھتی ہے..؟؟؟
امام سجاد علیہ السلام نے کہا – پھوپھی اماں سکینہ نے یہ سوال اپنے وقت کے امام سے کیا ہے اور مجھ پر لازم ہے کہ میں اس سوال کا جواب دوں..
امام نے فرمایا بہن سکینہ، پیاس کی کُل چار منزلیں ہوتی ہے

پہلی منزل وہ ہوتی ہے جب انسان اتنا پیاسا ہو کہ اس کی آنکھوں سے دھواں دھواں سا دکھائی دے اور زمین اور آسمان کے درمیان کوئی فرق محسوس نہ ہو.

جناب سكينہ- جی ہاں میں نے اپنے بھائی قاسم کو بابا سے کہتے سنا تھا “چچا جان میں اتنا پیاسا ہوں کہ مجھے زمین سے آسمان تک صرف دھواں سا دکھائی دیتا ہے.

امام سجاد ع نے پھر فرمایا
پیاس کی دوسری منزل یہ ہے کہ جب کسی کی زبان سوكھ كر تالو سے چپک جائے.

جناب سكينہ- جی ہاں جب بھائی اکبر نے اپنی خشک زبان بابا کے دہن میں رکھ کر باہر نکال لی تھی اور کہا تھا “بابا آپ کی زبان تو میری زبان سے زیادہ خشک ہے پھر شاید میرا بابا پیاس کی دوسری منزل میں تھا.

امام سجاد ع نے پھر فرمایا
پیاس کی تیسری منزل وہ ہے جب کسی مچھلی کو پانی سے باہر نکال کر ریت پر ڈال دیا جاتا ہے اور وہ مچھلی کچھ دیر تڑپنے کے بعد بالکل ساکت سی ہو کر اپنا منہ بار بار کھولتی اور بند کرتی ہے.

جناب سكينہ- ہاں جب میرے بابا نے بھائی علی اصغر کو کربلا کی جلتی ریت پر لٹا دیا تھا تو اصغر بھی ویسے ہی تڑپنے کے بعد ساکت سا تھا اور اپنا منہ کھولتا تھا پھر بند کرتا تھا شاید میرا بھائی اس وقت پیاس کی تیسری منزل میں تھا.

امام سجاد ع نے پھر فرمایا
پیاس کی چوتھی اور آخری منزل وہ ہے جب انسان کے جسم کی نمی بالکل ختم ہو جاتی ہے اور اس کا گوشت ہڈیوں کو چھوڑ دیتا ہے پھر انسان کی موت ہو جاتی ہے.

اتنا سن کر جناب سکینہ ع نے اپنے ہاتھوں کو امام سجاد ع کے آگے کیا اور کہا
بھائی سجاد میں شاید پیاس کی آخری منزل میں ہوں. دیکھو میرے جسم کے گوشت نے ہڈیوں کا ساتھ چھوڑ دیا ہے اور میں عنقریب اپنے بابا کے پاس جانے والی ہوں.

سکینہ کے یہ الفاظ سن کر قید خانے میں ایک كہرام بپا ہو گيا😭😭

اب ہم اندازہ لگا سکتے ہیں کہ ہم روزے میں پیاس کی پہلی منزل تک بھی نہیں پہنچتے
افسوس پھر بھی بہت سے لوگ روزہ نہیں رکھتے ہیں……
🌾

Print Friendly, PDF & Email

Share Your Thoughts

Make A comment

Subscribe By Email for Updates.